ترک چیف آف اسٹاف یاسار گُلیرکی پاک آرمی چیف قمر باجوہ سے ملاقات

0 975

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری بیان کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ترک مسلح افواج کے کمانڈر جنرل یاسرگولیر نے ملاقات کی۔

ملاقات میں علاقائی سیکیورٹی صورتحال اور دوطرفہ دفاعی تعاون بڑھانے کے اقدامات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

ترک کمانڈر نے خطے میں امن اور استحکام کے لیے پاک فوج کے کردار کو سراہا۔

انقرہ اور اسلام آباد نے حالیہ برسوں میں دوطرفہ دفاع اور سلامتی کے تعاون کو فروغ دیا ہے۔ اکتوبر 2018 میں ، پاک بحریہ نے ملک کےجنوب میں واقع بندرگاہی شہر کراچی میں ترکی کی ایک دفاعی کمپنی کے اشتراک سے ایک 17،000 ٹن بیڑہ ٹینکر تیار کیا۔

پاک بحریہ کے مطابق ، یہ ترکی کے دفاعی ٹھیکیدار ایس ٹی ایم کے اشتراک سے کراچی شپ یارڈ اور انجینئرنگ ورکس میں اب تک کا سب سے بڑا جنگی جہاز تھا۔

جولائی 2018 میں ، انقرہ نے پاک بحریہ کو چار کارویٹوں کی فراہمی کے لئے اربوں ڈالر کا ٹینڈر جیتا تھا۔ یہ معاہدہ اس وقت کے وزیر دفاع نورالدین کینیکلی  کے دور کا ترکی کی دفاعی صنعت کے لئے تاریخ کی سب سے بڑی برآمدات قرار دیا گیا تھا۔

ترکی نے 2016ء میں 34 ٹی-37 طیارے تحائف کے طور پر پاکستان کو بھیجے تھے۔

دریں اثنا ، انقرہ پاکستان سے MFI-17 سپر مشک طیارے خریدنے کے علاوہ تین پاکستانی آبدوزوں کو اپ گریڈ کرنے اور مشترکہ طور پر ایک بیڑا ٹینکر بنانے کی کوشش کر رہا ہے۔

تبصرے
Loading...