فتح اللہ گولن دہشتگرد تنظیم کے شر کو جڑ سے ختم کر دینا چاہیے، پاکستان قونصل جنرل

0 190

​ترکی اور پاکستان نے فتح اللہ گولن دہشتگرد تنظیم کے خلاف مشترکہ محاذ بنایا ہے جو ترکی کے 15 جولائی کی ناکام بغاوت میں پشت پر موجود تھی، یہ بات استنبول میں پاکستانی کونسل جنرل ڈاکٹر یوسف جنید نے ترک اخبار ینی شفق کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کہی-

انہوں نے کہا کہ ان مشکل حالات میں پاکستان ترکی کے شانہ بشانہ کھڑا ہے، پاکستان میں فیتو (فتح اللہ گولن دہشتگرد تنظیم) عناصر اسکولز چلا رہے تھے، فیتو کی ناکام بغاوت کے بعد دونوں حکومتیں رابطے اور ان معاملات پر ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کر رہی تھیں- ترک حکومت کی تجویز اور خود ہمارے اپنے مفادات کے تحت ہم نے ان تعلیمی اداروں کو شفاف طریقے سے معارف فاونڈیشن کے حوالے کر دیا ہے-

اب تک دنیا بھر میں 80 سے زائد اداروں کو جن میں تعلیم اور ٹریننگ سنٹرز شامل ہیں یا تو بند کیے جا چکے ہیں یا ترک محکمہ تعلیم کی ذیلی معارف (تعلیمی) فاونڈیشن کے حوالے کر دئیے گئے ہیں-

پاکستانی کونسل جنرل نے کہا کہ دہشتگردی کا سالوں تک سامنا کرنے کے بعد ہمیں نے یہ سبق حاصل کیا ہے کہ اس طرح کے شر پسند عناصر کو ابتداء سے ہی جڑ سے اکھاڑ پھینکنا چاہیے، ہم ترک حکومت کی طرف سے ایسے دہشتگردوں اور ان کے حملوں سے بچائو کے لیے کیے جانے والے اقدامات کی مکمل حمایت کرتے ہیں-

تبصرے
Loading...