ڈچ پولیس کے کتے سے زخمی ہونے والا تارک وطن بہترطبی امداد کے لیے ترکی واپس آ گیا

0 191

ہالینڈ کے شہر روٹرڈیم میں ترک وزیر کے خلاف ناروا رویے پر ترک سفارت خانے کے قریب ترک تارکین وطن نے احتجاج کیا جس دوران ڈچ پولیس نے انہیں کتوں کی مدد سے پُر تشدد طریقے سے منتشر کیا۔ اس دوران زخمی ہونے والا ترک شہری واپس ترکی پہنچ چکا ہے اور اسے وزارت صحت کے تحت طبی سہولیات دی جا رہی ہیں۔

فوٹو: اناطالیہ نیوز

وزیر خارجہ چاوش اوغلو نے کہا ہے کہ حسین کرت کو بہتر طبی سہولیات کے لیے استنبول لایا گیا ہے۔

 

11مارچ کو ہالینڈ نے سب سے پہلے وزیر خارجہ جاوش اوغلو کی فلائٹ کو داخلہ سے روک کر کینسل کر دیا تھا۔ اس کے اگلے ہی دن وزیر خاندانی امور فاطمہ بتول کایا کے وفد کو ترک سفارت خانے میں داخل ہونے سے روک کر ڈی پورٹ کر دیا گیا تھا۔ اس واقعہ کے بعد نہ صرف ترکی بلکہ ہالینڈ میں رہنے والے ترک شہریوں میں غم و غصہ کی لہر دور گئی تھی۔
 
ہالینڈ میں موجود ترک شہریوں کی بڑی تعداد ترک سفارت خانے کے قریب جمع ہو گئی جسے منتشر کرنے کے لیے ڈچ پولیس نے کتوں کی مدد لی۔ اس دوران کئی ترک تارکین کتوں کے کاٹنے سے زخمی ہو گئے تھے۔ کرت کی تصاویر کو بڑے پیمانے پر میڈیا میں دکھایا گیا تھا۔

تبصرے
Loading...