یورپی یونین نے پوپ کی سربراہی میں ویٹیکن میں اجلاس کا انعقاد کرکے صلیبی اتحاد کا اصل چہرہ واضح کردیاہے ، صدر ایردوان

0 319

 

صدر ایردوان نے یورپ سے استفسار کرتے ہوئے کہا آخر تم لوگ کیوں ویٹیکن میں اکٹهے ہوئے ؟ ویٹیکن کب سے یورپی اتحاد کا حصہ بنا ؟ اور کیوں یہ اجلاس پوپ کی سربراہی میں ہوا ؟ جبکہ ترکی کی یورپی یونین کی رکنیت کو مسترد کردیا جاتا ہے کہ یہ مسلمان ملک ہے- آخر یہ کیا ہے ؟ تم لوگ جو پہلے کہتے رہے ہو اب اس بارے میں کیا کہو گے ؟! اور ﺗﺮﮐﯽ ﮐﻮ 54 ﺑﺮﺳﻮﮞ ﺳﮯ ﺍﭘﻨﮯ ﺩﺭﻭﺍﺯﮮ ﭘﺮ ﺍﻧﺘﻈﺎﺭ ﮐﺮایا جاتا رہا ہے-

ﺍن کا مزید کہنا تها یورپی یونین دوہرے معیار پر عمل پہرا ہے- ﮐﺴﯽ ﺑﮭﯽ ﺭﮐﻦ ﻣﻠﮏ ﮐﻮ ﺍﺱ ﻃﺮﺡ ﺍﻧﺘﻈﺎﺭ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﺮﺍﯾﺎ ﮔﯿﺎ- ترکی کیوں منتظر رہا کیوں کہ ﯾﻮﺭﭘﯽ ﯾﻮﻧﯿﻦ ﮐﮯ ﺍﻧﺪﺭ ﻣﺴﻠﻤﺎن ﺍﮐﺜﺮﯾﺖ ﮐﺎ ﺣﺎﻣﻞ ﮐﻮﺋﯽ ﻣﻠﮏ ﻣﻮﺟﻮﺩ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﮯ۔

ایردوان ﻧﮯ ﮐﮩﺎ ﮐﮧ ﯾﻮﺭﭖ ﮐﮯ ﺟﮭﻮﭦ ﮐﮯ ﭘﻠﻨﺪﻭﮞ ﮐﻮ ﺍﻥ ﮐﮯ ﻣﻨﮧ ﭘﺮ ﻣﺎﺭتے ہیں تو یہ ﺑﮯ ﭼﯿﻨﯽ ﻣﺤﺴﻮﺱ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ، ﺟﺐ ﮨﻢ ﺣﻘﺎﺋﻖ ﮐﻮ ﺳﺎﻣﻨﮯ ﻻﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﺗﻮ ﺍﻥ ﮐﮯ ﭼﮩﺮﮮ ﺍُﺗﺮ ﺟﺎﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﮐﮩﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﮐﮧ ﺁﭖ ﮨﻤﯿﮟ ﺩﮬﻤﮑﯿﺎﮞ ﺩﮮ ﺭﮨﮯ ﮨﯿﮟ۔ ﺍﺏ ﺁﭖ ﮨﯽ ﺑﺘﺎﺋﯿﮟ ﮐﮧ ﺍﺱ ﻣﯿﮟ ﮐﻮﻧﺴﯽ ﺩﮬﻤﮑﯽ ﮨﮯ؟ ﯾﻮﺭﭘﯽ ممالک ﮐﯽ ﺍﻧﺴﺎﻧﯽ ﺣﻘﻮﻕ کی پامالیوں ﮐﮯ ﺑﺎﻋﺚ ﭘﯿﺪﺍ ﮨﻮنے والے مسائل اور نتائج ﺳﮯ ﺧﺒﺮﺩﺍﺭ ﮐﺮﻧﺎ ﮨﺮﮔﺰ ﺩﮬﻤﮑﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﮯ۔

تبصرے
Loading...