ترکی میں بڑی سیاسی تبدیلی، 70 مئیرز کی حکمران جماعت آق پارٹی میں شمولیت

0 1,862

میڈیا کو جاری کی گئی ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 70 مئیرز نے ترکی کی حکمران جماعت آق پارٹی میں باقاعدہ طور پر شمولیت کے لیے درخواستیں جمع کروائیں، جن کی سکوروٹنی مکمل ہو گئی ہے اور اگلے پارلیمانی گروپ کے اجلاس میں پارٹی میں شمولیت کے باقاعدہ پارٹی بیج وصول کریں گے۔

رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ شمولیت کرنے والے مئیرز میں ڈسٹرکٹ اور شہروں کے اپوزیشن پارٹیوں اور آزاد مئیرز شامل ہیں جو کم و پیش 2۔5 ملین شہریوں کی نمائندگی کر رہے ہیں۔

آق پارٹی کے ڈپٹی چئیرمین بولنت توران نے 20 جنوری کو ایک بیان میں کہا تھا کہ تقریباً 100 مئیرز آق پارٹی میں شمولیت اختیار کریں گے۔

آق پارٹی کے ذرائع نے پہلے بھی بتایا تھا کہ آق پارٹی نے 85 میں سے 35 ڈسٹرکٹ میئروں کی درخواستوں کو قبول کیا ہے جو پارٹی میں شامل ہونے کے معیار کو پورا اترتے ہیں۔

آق پارٹی میں شمولیت کے لیے پہلی درخواست ترک نیشنلسٹ”اچھی پارٹی” (IYI Parti) کے ضلع انجیسو کے مئیر مصطفےٰ ایلمک کی طرف سے جمع کروائی گئی جس میں ان کے کیسری صوبہ سے کونسلرز بھی شامل تھے۔ سعادت پارٹی سے تعلق رکھنے والے حسن بیلی ڈسٹرکٹ کے میئر صلاح الدین دینیز اولو اور سیکولر کمالسٹ جماعت جمہوریت خلق پارٹی کے بوجیکلی ڈسٹرکٹ کے مئیر حسین آچماز آق پارٹی میں شمولیت کے لیے بتدریج دوسری اور تیسری درخواست جمع کروانے والے مئیرز تھے۔

آق پارٹی نے دسمبر میں ایک خصوصی اجلاس منعقد کیا تھا جس میں تمام زیر التواء درخواستوں کو نبٹانے اور معیار پر شمولیت کا فیصلہ کرنے کا اعلان کیا گیا تھا۔

تبصرے
Loading...