16اپریل احیاء کا دن ہے: صدر رجب طیب ایردوان

0 433

کاستمنو میں ایک عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا: "آئینی ترامیم کے بعد ہم ملک میں نئے نظام حکومت کی بنیاد رکھ رہے ہیں۔ یہ ہماری عوام کی ضرورت اور مستقبل ہے۔ 16 اپریل کو "ہاں” میں پڑنے والا ہر ووٹ 2023ء ویژن کے راستے کی اینٹ بنے گا۔ 16 اپریل کو "ہاں” میں آنے والا ہر ووٹ ویژن 2053ء اور ویژن 2071ء کی بنیاد رکھ دے گا”۔ 

ترکی تاریخی سنگھم پر کھڑا ہے

صدر رجب طیب ایردوان نے کہا: "دنیا میں جہاں کہیں مسلمان بستے ہیں وہاں مصائب امٹتے ہیں تو ان کی نظریں ترکی پر ہوتی ہیں، ان کی امیدیں ترک ملت سے وابستہ ہوتی ہیں”۔ انہوں نے کہا: "16اپریل، احیاء کا دن ہے”۔

اس موقع پر صدر ایردوان نے عوام سے ایک عظیم، مضبوط، مستحکم ترکی کے لیے "ہاں” کہنے کی اپیل کی اور کہا کہ ترکی اس وقت تاریخی سنگھم پر کھڑا ہے۔

نئے نظام میں صدر احتساب سے ماوراء نہیں ہے

2001ء میں صدر اور وزیر اعظم کے درمیان چپقلش جو ترکی کی تاریخ میں ایک بڑے معاشی اور سیاسی بحران کی وجہ بن گئی اس کا ذکر کرتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا: "اس کے بعد کیا ہوا؟ وزیراعظم نے سیاسی منظرنامے سے ہٹتے ہوئے قربانی پیش کی۔ اور پھر صدر کے ساتھ کیا ہوا؟ کچھ بھی نہیں۔ وہ ایوان صدارت میں بیٹھا رہا۔ کیوں کہ وہ صدر تھا اور احتساب سے ماوراء تھا۔ آپ اس کی مدت سے پہلے اسے نہیں ہٹا سکتے”۔

صدر ایردوان نے کہا: "موجودہ نظام میں آج بھی صدر قابل مواخذہ نہیں ہے۔ اب اسے کنٹرول کرنے کے لیے پارلیمنٹ کو کئی ذرائع دئیے گئے ہیں، پارلیمنٹ کی اکثریت اسے سپریم کورٹ بھیج سکتی ہے۔ اب صدر کے آئینی احکامات کے خلاف آئینی کورٹ میں اپیل کی جا سکتی ہے”۔

صدر نے کہا: "اگر اس ملک میں آئین ہے تو فردواحد کی حاکمیت نہیں ہو سکتی۔ اگر اس ملک میں جمہوریت اور آئین کی حکمرانی ہے تو فرد واحد کی حاکمیت قائم نہیں ہو سکتی۔ اور ان سب سے بالاتر اگر اس ملک میں عوام الناس کو ان کی رائے اور فیصلے کا برابر حق ملتا ہے تو یہاں کبھی فرد واحد کی حاکمیت قائم نہیں ہو سکتی۔ ترکی یہ تمام خصائص اپنے اندر رکھتا ہے۔ اور نئے نظام میں مزید انہیں مضبوط بنا رہا ہے”۔

16 اپریل کے بعد ترکی میں نئی صبح کا آغاز ہو گا

16 اپریل کو ترکی کی نئی صبح اور احیاء کا دن قرار دیتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا: "آئینی ترامیم کے بعد ہم ملک میں نئے نظام حکومت کی بنیاد رکھ رہے ہیں۔ یہ ہماری عوام کی ضرورت اور مستقبل ہے۔ 16 اپریل کو "ہاں” میں پڑنے والا ہر ووٹ 2023ء ویژن کے راستے کی اینٹ بنے گا۔ 16 اپریل کو "ہاں” میں آنے والا ہر ووٹ ویژن 2053ء اور ویژن 2071ء کی بنیاد رکھ دے گا”۔ 

تبصرے
Loading...