آرمینیا کے دو جہاز پہاڑ سے ٹکرا کر تباہ ہوئے، آذربائیجان

0 173

آرمینیا کے صدارتی مشیر حکمت حاجیف نے کہا ہے کہ آرمینیا کے دو سخوئی-سو 25 طیارے، جن کے حوالے سے دعویٰ کیا گیا تھا کہ ترک ایف-16 نے گرائے ہیں، دراصل پہاڑی سے ٹکرا کے تباہ ہوئے تھے۔

حاجیف نے آرمینیا پر الزام لگایا ہے کہ وہ اپنے جہازوں کے حوالے سے جھوٹ بول رہی ہے اور اس سے ظاہر ہے کہ آرمینیا کی عسکری قیادت اپنے شہریوں اور عوام کو درست معلومات فراہم نہیں کر رہی۔

آرمینیا کی وزارت دفاع نے منگل کو کہا تھا کہ ترک لڑاکا طیارے نے آذربائیجان کے صوبے گنجا سے پرواز کرنے کے بعد آرمینیا کے ایک سو- 25 طیارے کو مار گرایا جو اپنی ملکی حدود کے اندر تھا۔ آرمینیا نے بعد ازاں اس جہاز کے ملبے کی تصاویر بھی شائع کی اور کہا کہ اس واقعے میں پائلٹ میجر والیری ڈینلن کی جان گئی۔

ترکی اور آذربائیجان کے حکام نے اس دعوے کو فوری طور پر مسترد کیا۔

صدارتی مشیر فخر الدین آلتن نے بتایا کہ یہ سراسر لغو الزام ہے۔ آرمینیا ایسے گھٹیا پروپیگنڈے کے بجائے مقبوضہ علاقے خالی کرے تو بہتر ہے۔

آذربائیجان کی وزارت دفاع نے بھی ان الزامات کی تردید کی ہے۔ وزارت نے ایک بیان میں کہا ہے کہ یہ آرمینیا کی فوجی پروپیگنڈا مشین کا ایک اور واہمہ ہے۔

قفقاز کے علاقے میں صورت حال آذربائیجان میں شہریوں پر حملے کی وجہ سے کشیدہ ہوئے ہیں کہ جن میں 11 افراد جاں بحق اور 33 زخمی ہوئے ہیں۔

سرحدی جھڑپیں اتوار کی صبح شروع ہوئیں جب آرمینیا کے فوجیوں نے آذربائیجان کی شہری آبادی اور عسکری ٹھکانوں کو نشانہ بنایا۔

اس کے بعد کشیدگی میں اضافہ ہو گیا، انقرہ نے ایک مرتبہ پھر آذربائیجان کی حمایت کا اعلان کیا۔

تبصرے
Loading...