ترکی میں 9,800 لوگوں کو قرنطینہ میں رکھا گیا ہے، وزیرِ داخلہ

0 110

وزیرِ داخلہ سلیمان سوئیلو نے کہا ہے کہ COVID-19 کی وجہ سے اس وقت ترکی میں 9,800 لوگوں کو قرنطینہ میں رکھا گیا ہے۔

پارلیمان کے باہر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ قرنطینہ میں رکھے گئے افراد کی کُل تعداد 9,800 ہے جن میں سعودی عرب میں عمرے کی ادائیگی کے بعد واپس آنے والے افراد بھی شامل ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سوشل میڈیا پر کروناوائرس کے حوالے سے جعلی اور اشتعال انگیز خبریں چلانے والے 242 مشتبہ افراد میں سے 64 کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

ترکی میں اب تک 191 کیس سامنے آئے ہیں جبکہ تین افراد کی موت واقع ہوئی ہے۔

COVID-19 گزشتہ سال دسمبر میں چین کے شہر ووہان سے پھیلا اور اب کم از کم 160 ممالک اور علاقوں تک پھیل چکا ہے۔ عالمی ادارۂ صحت (WHO) نے اسے ایک عالمگیر وباء قرار دیا ہے۔

امریکا کی جانز ہوپ کنز یونیورسٹی کے اعداد و شمار کے مطابق دنیا بھر کے کُل 2,29,000 تصدیق شدہ مریضوں میں سے اب تک 9,300 موت کے شکار ہو چکے ہیں جبکہ 84,500 صحت یاب ہو گئے ہیں۔

مریضوں تو روز بروز بڑھتی جا رہی ہے لیکن ان میں سے بیشتر درمیانی شدت کی علامات کے حامل ہیں اور جلد صحت یاب ہو رہے ہیں۔

تبصرے
Loading...