امریکا کے مقابلے میں او آئی سی نے بیت المقدس کو فلسطین کا دارالحکومت قرار دے دیا

0 597

امریکا کے مقابلے میں اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) نے شمالی بیت المقدس کو "مقبوضہ” فلسطین کا دارالحکومت قرار دے دیا ہے اور امریکا پر زور دیا ہے کہ وہ امن عمل سے نکل جائے اور بیت المقدس پر اپنا فیصلہ واپس لے۔ استنبول میں ہونے والے اسلامی تعاون تنظیم کے غیر معمولی سربراہی اجلاس کے اختتام پر فیصلہ کیا گیا۔

اسلامی تعاون تنظیم اجلاس کے بعد متفقہ اعلامیہ جاری کیا گیا جس کے مطابق:

بیت المقدس کو اسرائیل کا نام نہاد دارالحکومت بنانے کے یکطرفہ فیصلے کی نہ صرف مذمت بلکہ رد کرتے ہیں اور سمجھتے ہیں کہ یہ فلسطینی عوام کے تاریخی، قانونی، فطری اور قومی حقوق پر حملہ ہے۔ اس سے تمام امن کوششوں کو ثبوتاژ کرنے اور بنیاد پرستی اور دہشتگردی کو بڑھانے میں مدد ملے گی۔ لہذا یہ عالم امن اور استحکام کے لیے ایک خطرہ ہے۔ تمام رکن ممالک مسئلہ فسلطین کو اپنی روزمرہ بیانیہ میں ترجیح پر رکھیں گے اور فارن پالیسی ایجنڈا کا حصہ بھی بنائیں جس وہ دنیا کے دوسرے ممالک کے ساتھ تعاون و معاہدے کرتے ہیں۔

اعلامیہ کے مکمل نکات کے لیے دوبارہ وزٹ کریں

 

تبصرے
Loading...