اگر تمام ووٹوں کی دوبارہ گنتی ہوئی تو آق پارٹی جیت جائے گی: یلدرم

0 979

استنبول کے میئر کے عہدے کے لیے حکمران جماعت انصاف و ترقی پارٹی (آق پارٹی) کے امیدوار بن علی یلدرم نے کہا ہے کہ اگر 31 مارچ کو ہونے والے انتخابات کے تمام ووٹ دوبارہ گنے گئے تو وہ جیت جائیں گے۔

"کُل ووٹوں کا صرف 10 فیصد دوبارہ گننے پر ہی میرے اور اکرم امام اوغلو کے درمیان ووٹوں کا فرق گرتے ہوئے تقریباً 12،200 تک پہنچ گیا ہے۔” وہ اُس مارجن کی طرف اشارہ کر رہے تھے جو سپریم الیکشن کونسل (YSK) کے اعلان کردہ نتائج کے مطابق 28،000 ووٹوں کا تھا۔

"ہمیں یقین ہے کہ اگر تمام ووٹوں کی دوبارہ گنتی ہوئی تو یہ فرق مزید کم ہوتے ہوئے ہمارے حق میں چلا جائے گا۔”

یلدرم نے کہا کہ یہ "بالکل واضح” ہے کہ بیلٹ بکس پر فراڈ کیا گیا اور آق پارٹی کے ووٹوں کا اندراج اہم حریف جماعت جمہور خلق پارٹی (CHP) کے امیدوار امام اوغلو کے حق میں کیا گیا۔”یہی وجہ ہے کہ فرق تیزی سے ہمارے حق میں کم ہوتا جا رہا ہے،” انہوں نے کہا۔

یلدرم نے کہا کہ ترکی کے سب سے بڑے شہر استنبول کی قیادت ایسے ہاتھوں میں نہیں جانی چاہیے جو فراڈ کے ذریعے اقتدار میں آئے۔

انہوں نے ایک مرتبہ پھر کہا کہ YSK کی جانب سے میئر استنبول کی دوڑ جیتنے والے کے اعلان کا صبر کے ساتھ انتظار کرنا چاہیے۔

تبصرے
Loading...