کروناوائرس کے خلاف جنگ، آذربائیجان کی جانب سے ترکی کا شکریہ

0 257

آذربائیجان کی ایک اہم رہنما نے کروناوائرس کے خلاف اظہارِ یکجہتی پر ترکی کا شکریہ ادا کیا ہے۔

نائب صدر مہربان علیفا نے انسٹاگرام پر کہا کہ "میں برادر ملک ترکی کا تہہِ دل سے شکر گزار ہوں۔ دونوں ہمیشہ شانہ بشانہ رہتے ہیں، خوشی کے لمحات میں بھی اور مشکل ایّام میں بھی۔”

انہوں نے مزید کہا کہ "یہ ہمارا باہمی اتحاد و یگانگت ہے۔ میں دونوں ملکوں کے عوام کو صحت اور ملکوں کے لیے امن و خوشحالی کی دعا کرتی ہوں۔ اللہ ہماری دنیا کو محفوظ رکھے!”

گزشتہ ہفتے میں ترکی اور آذربائیجان نے انقرہ اور باکو کی اہم عمارات کو ایک دوسرے کے پرچموں سے روشن کیا جو COVID-19 کے سلسلے میں ایک دوسرے کے تعاون کا اعتراف تھا۔

ترکی 1991ء میں آزادی کے بعد آذربائیجان کو قبول کرنے والا دنیا کا پہلا ملک تھا۔ دونوں ملکوں کے مابین بہترین تعلقات ہیں۔

گزشتہ سال چین میں منظرِ ام پر آنے والا وائرس اب تک کم از کم 185 ممالک اور خطوں تک پھیل چکا ہے۔ جس کے متاثرین کی تعداد 20 لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے جبکہ 1 لاکھ 28 ہزار افراد موت کا شکار ہو چکے ہیں۔ 5 لاکھ سے زیادہ لوگ اس بیماری سے صحت یاب بھی ہوئے ہیں۔

تبصرے
Loading...