خون صد ہزار انجم سے ہوتی ہے سحر پیدا – عاشر عرفان

0 1,783

میں حرم پاک میں بیٹھی ہوں اور ترکی کیلیے دل سے دعا گو ہوں. اپنا زیور بیچ کر ترکش لہرا خرید رہی ہوں. اسری غوری کا یہ پیغام مکہ مکرمہ سے موصول ہوا. اس بہن نے ہمارے دلوں میں تحریک خلافت کی یاد کو تازہ کر دیا جب برصغیر کی ماؤں بہنوں اور بیٹیوں نے اپنے زیورات بھیج کر سرمایہ عثمانی خلیفہ کو بھیجا تاکہ خلافت کو کسی نا کسی طرح فرنگیوں کے وار سے بچایا جا سکے. آخر اس مادی دنیا میں وہ کونسی قوت ہے جو ترکوں اور برصغیر کے مسلمانوں کو آپس میں جوڑے ہوئے ہے. یہ قوت وہی رشتہ ہے جس کو اقبال نے اپنے اس شعر میں بیان کیا ہے
ایک ہوں مسلم حرم کی پاسبانی کیلیے
نیل کے ساحل سے تابخاک کاشغر
اکیسویں صدی میں جہاں افراد کی ایک بڑی تعداد کو یہ باتیں افسانوی لگتی ہیں وہیں افراد کی ایک بڑی تعداد اس جزبہ کو عملاً نبھا رہی ہے. ترک حکومت نے جب سے امریکی پادری کو ناکام بغاوت میں کردار ادا کرنے کے الزام میں گرفتار کیا ہے تب سے ٹرمپ انتظامیہ ایک بوکھلائے ہوئے گیدڑ کی طرح ترکی کے خلاف اقدامات کر رہی ہے. ترکی پر ہر قسم کا سیاسی اور معاشی پریشر ڈالا جا رہا ہے تاکہ اس پادری کو واپس امریکہ کے حوالے کیا جائے. اردگان انتظامیہ اس بار پر ڈٹ چکی ہے کہ کسی پریشر کو قبول کیے بغیر اپنے دوستوں اور اتحادیوں کے ساتھ امریکی جارحیت کا بھرپور مقابلہ کرے گی.
اس صورتحال کو بھانپ کر اور ترکی کی گرتی ہوئی معیشت کو سنبھالا دینے کیلیے فورا سے قطر کے امیر تمیم بن حماد نے ترکی کا دورہ کیا اور 15 بلین ڈالر کی ڈائریکٹ سرمایہ کاری ترکی میں کرنے کا اعلان کیا. تمیم کے دورہ ترکی کو اسلامی دنیا میں بے حد سراہا گیا اور دو اسلام پسند حکومتوں کا یہ اتفاق بہت سوں کے جسموں میں کانٹے کی طرح جا چبھا. پوری قطری قوم نے ترکی کے ساتھ اظہار یکجہتی کا عملی نمونہ پیش کیا اور بھاری تعداد میں ترک لیرا خرید کر ترک معیشت کو سنبھالا دیا. یاد رہے گزشتہ سال ترک قوم نے بھی اسی دیدہ دلیری اور خندہ پیشانی سے قطر کی مدد کی تھی جب سعودیہ اور اس کے اتحادیوں نے قطر کو پابندیوں کے حصار میں جکڑنا چاہا تھا.
چین اور روس نے بھی حالات کی نزاکت کو بھانپ کر ترکی کے ساتھ کھڑے ہونے کا فیصلہ کیا ہے. چینی حکومت نے ترکی سے ایلومینیم امپورٹ کرنے کا اعلان کردیا ہے. سب سے خوش آئند بات یہ ہے کہ یہ تجارت لوکل کرنسی میں ہوگی جس سے امریکی ڈالر کو نقصان جبکہ ترک اور چینی کرنسی کو فائدہ ہوگا.
نیز صدر رجب طیب اردگان نے اسلام پسند عادلانہ اور با اصول پالیسیوں کے نتیجے میں دنیا میں ایسے دوست بنا لیے ہیں جو ہر مشکل گھڑی میں ترکی کے ساتھ کھڑے ہونے کو ہمیشہ تیار رہتے ہیں.
یہ پریشانیاں اور مصیبتیں وقتی ہیں. لوہا بھٹی میں پک کر ہی کندن ہوگا
اقبال نے کیا خوب فلسفہ دیا تھا کہ
خون صد ہزار انجم سے ہوتی ہے سحر پیدا
محمد عاشر عرفان

تبصرے
Loading...