Browsing Category

مضامین

کیا عثمان ، ارطغرل سے کم معیار کا ڈرامہ ہے؟: آصف محمود

عثمان کی دو اقساط آ چکی ہیں ۔ کچھ دوستوں کو قدرے مایوسی ہوئی ہے اور انہوں نے سوال پوچھا ہے کیا عثمان کی پروڈکشن ارطغرل سے کم معیار کی ہے؟ اس سوال کی صورت میں وہ گویا اپنی رائے بھی دے رہے تھے کہ انہیں ان دو اقساط میں وہ مزہ نہیں آیا جو…

ایردوان، استعمار مخالف پالیسی کا اظہار

ہم ایک ایسے دور سے گزر رہے ہیں کہ جس میں مغرب کو اپنے سابقہ حلقۂ اثر کے ہاتھوں علانیہ سوالات کا سامنا ہے۔ یہ نظریاتی شدت پسندی نہیں بلکہ یہ وقت ایسا ہے جس میں سوال اٹھانا ذہنی جستجو سے کہیں آگے کی بات ہے اور درحقیقت مغربی استعمار کے لیے…

اسلام اور مغرب: فاصلے بڑھ رہے ہیں؟

کیا اسلامی اور مغربی معاشرے ایک دوسرے کے قریب آ رہے ہیں یا ان کے درمیان فاصلے بڑھ رہے ہیں؟ عالمگیریت کے اِس دور میں سخت گیر ثقافتی و تہذیبی حدود کے کمزور پڑنے کی توقع کی جا سکتی ہے لیکن حقیقت یہ ہے کہ اسلامی اور مغربی معاشروں کے درمیان…

جمال عبد الناصر اور عرب فوجی اقتدار کا عروج

مصر کے صدر محمد مرسی اور اُن کے بعد ان کے صاحبزادے کی اتنے ہی پراسرار انداز میں موت بتاتی ہے کہ اپنا اقتدار بچانے کے لیے عرب دنیا کی فوجی حکومتیں کس حد تک جا سکتی ہیں۔ مرسی نہ صرف ملک کے پہلے سویلین صدر تھے، بلکہ مصر کی پوری تاریخ میں…

ایک مضبوط ترکی، ایک مضبوط خِطہ

جب سلطنتِ عثمانیہ ترقیاتی لحاظ سے مغربی ریاستوں سے پیچھے رہ گئی تو سلطنت کی اشرافیہ نے زوال کے اسباب کی تحقیقات کیں تاکہ حکومت کی اصلاح کے لیے ضروری اقدامات اٹھائے جا سکیں۔ لیکن یورپ صنعتی انقلاب اور دنیا بھر میں نو آبادیاتی نظام کی بدولت…

‘ترک بمقابلہ کُرد’ کی بحث اور چند حقائق

آپریشن چشمہ بہار کے آغاز سے جن بحثوں سے جنم لیا ہے ان میں سب سے زیادہ سفید جھوٹ یہ ہے کہ یہ ترکوں اور کُردوں کے مابین جنگ ہے۔ یہ بات یا تو لاعلمی کی بنیاد پر کی جاتی ہے یا غلط اطلاعات پھیلانے کی جان بوجھ کر کی گئی کوشش ہوتی ہے۔ ترکی…

ترکی کے سول ملٹری تعلقات کا نیا ماڈل

اسلامی دنیا میں ترکی، پاکستان اور مصر کو سول ملٹری تعلقات میں سنجیدہ بحران کا سامنا رہا ہے جس کی وجہ سے سیاسی عدم استحکام سے اِن ممالک کی معاشی اور سماجی ترقی پر بہت بُرے اثرات مرتب ہوتے چلے آئے ہیں۔ ترکی بہرحال ان مسائل سے آگے نکل چکا ہے۔…

صدر ایردوان کی ریٹائرمنٹ، وقت ابھی نہیں آیا

صدر رجب طیب ایردوان نے گزشتہ بدھ کو انقرہ میں ترکی کے 30 شہروں کے میئرز کی میزبانی کی۔ کابینہ کے وزراء اور صدارتی کونسل برائے لوکل گورنمنٹ پالیسی کے اراکین کے ساتھ مل کر انہوں نے تجاویز بھی سنیں اور اہم اہداف کے حصول کے لیے اپنی ٹیم کو…

انقرہ اور استنبول میں شکست کے بعد آق پارٹی کا تجدیدی منصوبہ اگلے ہفتے شروع ہو گا

ترکی کی حکمران جماعت آق پارٹی کی گذشتہ بلدیاتی انتخابات میں انقرہ اور استنبول سے شکست کے بعد 2023ء کے انتخابات کے لیے تجدیدی منصوبہ لانچ کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ یہ تجدیدی منصوبہ اگلے ہفتے سے شروع کیا جائے گا۔ اس سے قبل آق پارٹی مختلف…

قطر میں نئے فوجی اڈے کا افتتاح رواں سال ہوگا

"تمہارے پیچھے سمندر ہے اور سامنے دشمن۔ واپس جانے کا اب کوئی راستہ نہیں۔" 711ء میں اپنے فوجیوں کے دل سے دشمن کا خوف نکالنے کے لیے طارق ابنِ زیاد نے اپنی کشتیاں جلا دی تھیں اور یہ تاریخی کلمات ادا کیے تھے۔ آج قطر کے دارالحکومت دوحہ میں انہی…