سی آئی اے نے وائے پی جی کو دہشتگرد پی کے کے کی شامی شاخ تسلیم کر لیا

0 864

امریکی سنٹرل انٹیلی جنس ایجنسی (سی آئی اے) نے سرکاری طور پر تصدیق کی ہے کہ ڈیموکریٹک یونین پارٹی (پی وائے ڈی) جس کی قیادت چیئرمین صالح مسلم کرتے ہیں اسے پی کے کے کی شاخ کے طور دہشتگرد تسلیم کر لیا گیا ہے-

 

اپنی "دی ورلڈ فیکٹ بک” کے شامی زمرے میں سی آئی اے نے غیر ملکی دہشتگروں گروہوں میں شامی پی وائے ڈی کو پی کے کے گروپ لسٹ کیا ہے-
یہ صفحہ 23 جنوری 2018ء کو اپ ڈیٹ کیا گیا تھا-

یہ انکشاف امریکی اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کی ترجمان ہیتھر نورت کی طرف پی وائے پی ڈی کے عسکری ونگ وائے پی جی کو پی کے کہنے کے تھوڑی دیر بعد سامنے آیا تھا-

دوران پریس کانفرنس نورت نے کہا کہ ترکی داعش کے بجائے پی کے کے سے نبٹتا رہا ہے-

ترجمان نے کہا، "ہم اس معاملے میں ترکی کے تحفظات کو سمجھتے ہیں” اور کہا کہ ان کے کہنے کا اصل مطلب پی وائے جی ہے نا کہ پی کے کے-

تاہم یہ پہلی بار نہیں کہ امریکہ نے پی کے کے اور پی وائے جی کے درمیان لنکس کی تصدیق کی ہو-

گذشتہ امریکی انتظامیہ کے اصرار کے باوجود کک پی کے کے اور وائے پی جی/ پی وائے ڈی کے درمیان کوئی روابط نہیں ہیں، سابق امریکی سیکرٹری دفاع اشتون کارٹر نے پی کے کے اور وائے پی جی/پی وائے ڈی کے درمیان روابط کی تصدیق کی تھی جب ان سے اپریل 2016ء میں سینٹ کانگریس کے دوران سینٹ پینل کی جانب سے سوالات کیے گئے تھے-

پی کے کے اور پی وائے ڈی کے درمیان روابط کی تصدیق کے بعد کارٹر نے یہ بھی بتایا تھا کہ پی کے کے نہ صرف ترک حکومت بلکہ امریکہ اور یورپی یونین کی جانب سے بھی دہشتگرد قرار دی جا چکی ہے-

امریکین آرمی کمانڈ کی جانب سے تیار کی گئی دی ٹیکٹیکل ایکشن رپورٹ میں بھی ان روابط کی تصدیق کی گئی تھی-

پی وائے ڈی کے حالیہ چیئرمین صالح مسلم بھی اس بات کا اقرار کر چکے ہیں کہ پی وائے ڈی میں پی کے کے کے کئی کمانڈر کام کر رہے ہیں-

 

 

تبصرے
Loading...