ترکی میں کروناوائرس انفیکشن کی شرح میں ایک تہائی کمی

0 1,019

ترکی میں جدید کروناوائرس سے انفیکشن کی شرح میں گزشتہ ہفتے میں ایک تہائی کمی آئی ہے جو 15 فیصد سے گھٹ کر 9 فیصد ہو گیا ہے، حالانکہ ٹیسٹ کرنے کی رفتار بڑھی ہے اور ساتھ ساتھ صحت یاب ہونے والے افراد میں بھی تین گنا اضافہ ہوا ہے۔

ترکی میں وباء کے آغاز – 10 مارچ- سے اب تک 5,98,933 ٹیسٹ کیے جا چکے ہیں، جن میں سے 83,329 افراد COVID-19 کا شکار قرار پائے۔ تب سے اب تک 1,890 افراد جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں جبکہ 10,453 مریض صحت یاب ہوئے ہیں۔

17 مارچ کو کروناوائرس سے ترکی میں ہونے والی پہلی ہلاکت سے 18 اپریل کے دوران ترکی میں وائرس سے موت کی شرح 2.29 فیصد تھی۔ جب پہلی بار 19 مارچ کو ایک سے زیادہ افراد جان دے بیٹھے تھے تب مریضوں میں شرحِ اموات 1.2 فیصد ہوئی۔ یہ شرح مارچ کے اختتام تک بڑھتے ہوئے 1.7 فیصد تک جا پہنچی، جب 2,704 کیس تھے اور ہلاکتیں 46 تھیں۔

11 اپریل کو جب ایک دن میں سب سے زیادہ مریض سامنے آئے، تب یہ شرح 1.85 فیصد تھی۔

اب COVID-19 کے لیے مزید افراد کے ٹیسٹ لیے جا رہے ہیں تاکہ ان کی تشخیص ہو سکے اور انہیں الگ کیا جا سکے۔ وباء کے ابتدائی ایام میں صرف ان افراد کے ٹیسٹ لیے جاتے تھے جو بیرونِ ملک سے آتے تھے یا پھر ان سے ملاقات کرنے والے افراد کے۔ بعد ازاں صحت کے شعبے سے وابستہ اُن افراد کے ٹیسٹ بھی شروع کر دیے گئے جن میں علامات ظاہر ہو رہی تھیں۔ اس وقت ہر اس شخص کا کروناوائرس ٹیسٹ لیا جا رہا ہے جو کسی تصدیق شدہ مریض سے رابطے میں رہا ہے۔

وزارتِ صحت کے ہسپتالوں کے ساتھ ساتھ اس کے منظور شدہ ہسپتالوں ،جامعات اور لیبارٹریز میں بھی ٹیسٹ مفت لیے جا رہے ہیں۔ 19 مارچ کو ٹیسٹ کیے جانے والے افراد کی تعداد 1,981 تھی۔ اگلے ہی دن یہ تعداد بڑھ کر 3,656، 10 دن میں 9,882 اور مارچ کے اختتام تک 15,442 تک جا پہنچی۔ 18 اپریل تک روزانہ ٹیسٹ کی تعداد ریکارڈ 40,520 ہو چکی ہے۔ ترکی اب تک کُل 5,98,933 ٹیسٹ لے چکا ہے۔

ترکی میں ٹیسٹ کیے گئے 13.74 افراد میں COVID-19 پایا گیا۔ اس کے علاوہ پچھلے ہفتے کے دوران ٹیسٹ کی تعداد میں اضافے کے باوجود روزانہ تصدیق شدہ مریضوں کی تعداد گھٹ رہی ہے۔

11 اپریل کو جب 33,170 ٹیسٹ لیے گئے تھے تو 5,138 مریضوں کا ٹیسٹ مثبت آیا۔ 18 اپریل کو 40,520 ٹیسٹ کروانے پر یہ تعداد گھٹتے ہوئے 3,783 ہو گئی۔ یعنی 11 اپریل کو مریضوں کی تعداد 15.4 فیصد تھی تو سنیچر کو گھٹتے ہوئے 9.3 فیصد ہو گئی۔

یہ ظاہر کرتا ہے کہ وائرس اب کنٹرول میں ہے اور لوگ وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے اٹھائے گئے اقدامات پر عمل کر رہے ہیں۔

تبصرے
Loading...