ریاست ہو ماں کے جیسی: سویڈن میں بیٹھی لیلیٰ کی پکار ترکی نے سن لی

0 7,319

اتوار کی صبح ترکی نے ایک ایئر ایمبولینس اپنے شہری کو سویڈن سے گھر لانے کے لئے روانہ کی جس کو کورونا وائرس لاحق ہو گیا تھا لیکن ان کا علاج نہیں کیا جا رہا تھا۔

ہوائی جہاز مالمو ائیرپورٹ سے مقامی وقت کے مطابق صبح 9 بجے (0700GMT) مریض ایمر اللہ گلوسکین اور اس کے تین بچوں کے ہمراہ ترکی روانہ ہوا۔

بیرون ملک رہنے والے باپ کی بیٹی نے اس اقدام پر صدر رجب طیب ایردوان اور وزیر صحت فخرالدین کوجا کا شکریہ ادا کیا۔

اس سے قبل ترک وزیر صحت میں اپنی ٹویٹ میں کہا تھا کہ

پیاری لیلیٰ!
ہم نے آپ کی آواز سنی، ہماری ائر ایمبولینس صبح 6بجے ہوا میں اٹھ رہی ہے، ہم سویڈن آرہے ہیں پورا ترکی ایسے حالات میں ہے ہمیں آپ سے دور ہونے پر افسوس ہے آپ کے بابا کے لیے ہمارے ہسپتال اور ڈاکٹرز حاضر، صدرجمہوریہ اور تمام شہریوں کی طرف سے نیک تمنائیں اور ڈھیر سارا پیار-

وزیر صحت نے خصوصی طیارہ روانہ کرنے کے بعد لکھا کہ ایک بیٹی نے کورونا وائرس سے متاثرہ باپ کے لیے ناقابل فراموش کام کیا- ہمارا ملک حرکت میں آیا، ائیر ایمبولینس صبح سویڈن سے مریض کو ملک میں لائی- تھوڑی دیر بعد وہ انقرہ میں ہوں گے- (اے پیاری لیلیٰ! ہم نے 25 ہزار مریضوں کو صحت یاب کیا، ان شاء اللہ ایمروللہ بے بھی ٹھیک ہو جائیں گے).

ترکی کے صدارت اطلاعات کے ڈائریکٹر فخر الدین آلتون نے بھی اس پیشرفت کو ٹویٹر پر شیئر کیا۔

انہوں نے کہا ، "ترک شہری ایمروللہ گلوسکین کا سویڈن میں علاج نہیں کیا گیا تھا اگرچہ اس میں اس وائرس کا ٹیسٹ پوزیٹو نکلا تھا۔ ہم اسے ایک ایمبولینس طیارے کے ساتھ ترکی لا رہے ہیں۔”

تبصرے
Loading...