والد کی بھری عدالت میں عھد تمیمی کو نصیحت

0 3,062

معروف بہادر فلسطینی لڑکی عھد تمیمی کی عدالت پیشی کے موقع پر ان کے والد نے باآواز بلند انہیں کہا کہ مضبوط رہنا، تم ہی فتح یاب ہو۔ احد تمیمی کو اسرائیلی فوج نے حراست میں لے رکھا ہے اور انہیں بارہ الزامات کا سامنا ہے۔


وڈیو یہاں دیکھیں:


عھد تمیمی فلسطین کے ایک گاؤں نبی صالح میں رہائش پذیر ایک سولہ سالہ فلسطینی مزاحمت کار ہے۔ عھد کے والد باسم التمیمی کا شمار اسرائیل کے خلاف اپنے وطن کی آزادی کی پرامن جدوجہد کرنے والوں میں کیا جاتا ہے۔

عھد تمیمی کا نام دو سال قبل بھی اس وقت خبروں میں آیا تھا جب ان کی ایک اسرائیلی فوجی کے ہاتھ پر کاٹنے کی تصویر شائع ہوئی تھی جو ان کے چھوٹے بھائی کو گرفتار کرنے کی کوشش کر رہا تھا۔

اس واقعے سے قبل 2012ء میں بھی عھد تمیمی کے اسرائیلی فوجیوں کے ساتھ تکرار اور ہاتھا پائی کی تصاویر منظرِ عام پر آئی تھیں جس کے بعد انہیں ترکی کے صدر رجب طیب ایردوان نے ملاقات کے لیے بلایا تھا اور انہیں ایوارڈ سے بھی نوازا تھا۔

نبی صالح میں کئی برسوں سے ہر ہفتے یہودی بستیوں کی تعمیر کے خلاف احتجاج کیا جاتا ہے۔  ایسے ہی ایک احتجاج کے دوران اپنے گھر میں داخل ہونے والے اسرائیلی فوجیوں کو روکنے کےلیے عھد تمیمی نے ایک اسرائیلی فوجی کے چہرے پر تھپڑ دے مارا تھا جس کی وڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی تھی۔

اس واقعے کے تین دن بعد اسرائیلی فوج نے رات میں عھد تمیمی کے گھر میں داخل ہو کر اسے حراست میں لے لیا اور مغربی کنارے میں واقع اسرائیل کی ایک جیل میں قائم خصوصی فوجی عدالت میں عھد تمیمی پر فردِ جرم عائد کی گئی۔

تبصرے
Loading...