کوئی بھی قوت عوام کے فیصلوں پر غالب نہیں آسکتی ہے۔ ایردوان

صدر رجب طیب ایردوان نے ایک بار پھر آق پارٹی پر اعتماد کا اظہار کرنے پر قوم کا شکریہ ادا کیا ہے۔

0 487

اردوان
صدر رجب طیب ایردوان نے حالیہ بلدیاتی انتخابات میں ایک بار پھر آق پارٹی کی کامیابی پر ترک قوم کا شکریہ ادا کیا ہے۔ اتوار کی شب پارٹی کے صدر دفتر کے باہر کثیر تعداد میں جمع ہونے والے پرجوش حامیوں سے ایک ولولہ انگیز پالیسی خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ انکی سیاسی جدوجہد کی اثاث ملی عظائم کی تکمیل اور عوام کی خدمت ہے اور کوئی بھی قوت عوام کے فیصلوں پر غالب نہیں آسکتی ہے۔

انہوں نے زور دیا کہ سیاسی بصیرت عوام کو حقیر سمجھنے کا نہیں، بلکہ انکے معیار زندگی کو بلند کرنے کیلئے جدوجہد کرنے کا نام ہے ۔ انکا کہنا تھا کہ جب سیاست میں عوام ترجیح نہ رہیں تو پھر، یہ فاشزم، آمریت اور استبداد میں تبدیل ہوجاتی ہے۔ اس موقع پر انہوں نے یہ بھی باور کرایا کہ انکی حکومت اپنا ہر ایک قدم اٹھاتے ہوئے ترک قوم کے اتحاد اور حمایت کے لئے کوشاں تھی، ہے اور رہے گی۔

آنے والے ساڑے چار سالوں کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اب ہم انتخابات کے مرحلے سے آگے بڑھ چکے ہیں اور اب ہماری توجہ کا محور ہمارے قومی اور بین القوامی اہداف ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم اپنی قوم کو اپنی معاصر تہذیبوں کی سطح سے بلند دیکھنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں اپنے تمام حل طلب مسائل کے لئے انقلابی منہج پر جدوجہد کرنی ہوگی۔

صدر ایردوان نے معاشی چیلنجز کا زکر کرتے ہوئے اعلان کیا کہ انکی حکومت کا آئندہ کا متمع نظر معیشت کا استحکام، ٹکنالوجی کے میدان میں ترقی، برآمدات میں بڑھوتری اور ملازمت کے مواقعوں میں اضافہ ہے۔ اس کیلئے مسلسل محنت کی جائے گی، یہاں تک 2023 تک کہ تمام اہداف حاصل نہ کرلئے جائیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم انشاءاللہ اس دور میں داخل ہورہے ہیں جب ہمیں اپنی قومی سلامتی سے متعلق معاملات میں فیصلہ کن کامیابی ملے گی۔ صدر نے بتایا کہ ہم پہلے ہی شام کی سرحد پر اپنے کافی حد تک اپنے نیٹ ورک کو منظم کرچکے ہیں اور ہماری خواہش ہے کہ شام ایک دہشت گردوں سے پاک ایک پرامن خطہ ہو تاکہ مہاجرین کی اپنے گھروں کو محفوظ واپسی ممکن ہوسکے۔

تبصرے
Loading...