ترک صدر ایردوان بوسنیا کے صدر مقام پہنچ گئے

0 1,168

ترک صدر رجب طیب ایردوان اتوار کے روز ببوسنیا اور ہرزیگووینا کے صدر مقام ساراجیوو پہنچ گئے۔

ان کے ہمراہ ڈپٹی وزیر اعظم حقان چاوش اولو، وزیر خارجہ میولوت چاوش اولو، وزیر معیشت نہات زیبیکجی، وزیر نوجواناں و کھیل عثمان اشکین بک، وزیر ثقافت و سیاحت نعمان کورتلومش ، وزیر ٹرانسپورٹ، میری ٹائم افیئرز و کمیونیکیشن احمد ارسلان اور مذہبی امور کے سربراہ علی ارباس شامل ہیں۔

وہ بوسنین اور ہرزیگووینین ہم مناصب سے ون ٹو ون ملاقات کے علاوہ دوطرفہ تجارتی سرگرمیوں کے فورم کے اجلاس میں بھی شرکت کریں گے۔

ان کے استقبال کے لیے شہر بھر میں قد آور بینر لگائے گئے ہیں۔

اس کے علاوہ ان کے استقبال کے لیے ایک بڑے عوامی تقریب کا بھی اہتمام کیا گیا ہے جس میں شرکت کے لیے کئی شہروں سے درجنوں بسیں دارالحکومت پہنچ رہی ہیں۔

انٹیلی جنس ذرائع کے مطابق ترکوں کا ایک گروپ ترک صدر ایردوان کو بوسنیا میں قتل کرنے کی منصوبہ بندی کر چکا ہے- اور ترک انٹیلی جنس اس بارے مزید معلومات اکٹھی کر رہی ہے-

ترک انٹیلی جنس کو مقدونیہ میں رہنے والے ترک شہریوں سے اطلاعات موصول ہوئی تھیں کہ چند افراد صدر ایردوان کو دورہ بلقان کے دوران قتل کرنے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں-

دوسری طرف مغربی انٹیلی جنس ایجنسیز نے بھی ترک انٹیلی جنس سے معلومات کے تبادلے کے دوران اسی قسم کی اطلاعات دی تھیں کہ بلقان کے دورے کے دوران ترک صدر کو قتل کرنے کی منصوبہ ہو چکی ہے-

اس قاتلانہ حملے کا مقام، طریقہ کار اور تاریخ تاحال معلوم نہیں ہو سکی- اس سلسلے میں ترک انٹیلی جنس ایجنسی نے تحقیقات کا آغاز کر رکھا ہے-

تبصرے
Loading...