2017ء کے چیلنجز کے مقابلے میں مضبوط موقف اپنانے پر ایردوان کا ترک عوام کو خراج تحسین

0 2,801

ترک صدر رجب طیب ایردوان نے 2017ء کے چیلنجز کے مقابلے میں مضبوط موقف اپنانے پر اظہار تشکر کیا ہے- انہوں نے سال نو کے وڈیو پیغام میں علاقائی اور عالمی مسائل کے حل کے لیے متحرک خارجہ پالیسی کو جاری رکھنے کا اعادہ کیا ہے-

صدر ایردوان نے کہا کہ امسال ترکی نے دہشتگرد تنظیموں، خصوصاً فتح اللہ گولن دہشتگرد تنظیم (فیتو) اور کرد ‘پی کے کے’ کے خلاف اہم اقدامات کئے ہیں-

انہوں نے کہا کہ 2016ء کرد ‘پی کے کے’ کی دہشتگرد کاروائیوں اور فتح اللہ گولن دہشتگرد تنظیم (فیتو) کی 15 جولائی کی ناکام بغاوت سے گہنا گیا تھا تاہم ترکی نے 2017ء میں ملک بھر میں انسداد دہشتگردی آپریشنز اور ملک سے باہر آپریشن فرات ڈھال کی مدد سے دہشتگردی کے مسائل پر قابو پایا ہے-

ترکی نے 24 اگست 2016ء کو آزاد شامی فوج کے ساتھ مل کر آپریشن فرات ڈھال شروع کیا تھا جس کا ابتدائی مقصد شامی سرحدی علاقوں کو داعش، پی کے کے اور اس کی ذیلی تنظیموں سے پاک کرنا تھا- یہ اپنے اہداف کا حاصل کرتے ہوئے مارچ 2017ء میں اختتام پذیر ہوا-

ایردوان نے اپنے پیغام میں بتایا ہے کہ بحیثیت صدر مملکت انہوں نے سال 2017ء میں ملک کے 51 شہروں کے 64 دورے کئے- وہ ہر موقع پر شہریوں کو گلے لگانے کی کوشش کرتے ہیں-

انہوں نے بتایا کہ امسال 25 ممالک کے 34 دورے کئے اور وہ عالمی منظرنامہ میں ملک کی بہترین نمائندگی پیش کرنے کی کوشش کرتے ہیں-

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بیت المقدس پر متنازعہ فیصلہ کو یاد کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے اس مسئلہ کو اسلامی دنیا کے لیے ایک ٹیسٹ کیس بنا دیا-

انہوں نے کہا: "بیت المقدس کا مسئلہ ہماری قوم اور ہمارے خطہ کے ساتھ ساتھ تمام دنیا کے مسلمانوں کے لیے ایک نیا ٹیسٹ بن گیا”-

انہوں نے مزید کہا "میں اپنے عوام کو اس ایشو پر مضبوط موقف اور پرخلوص رویہ اپنانے پر خراج تحسین پیش کرتا ہوں”-

تبصرے
Loading...