مذہبی آزادی پر عملی یقین رکھتے ہیں، ایردوان کی ہدایت پر تاریخی کلیسا بحال

0 1,527

استنبول کے گولڈن ہارن ساحل کے کنارے واقع مشہور بلغاریائی کلیسا سیواتی سٹیفن کا افتتاح کر دیا گیا ہے۔ افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ترک صدر رجب طیب ایردوان نے کہا کہ تاریخی مساجد ہمارے دل میں خاص مقام رکھتی ہیں، اور سلطان محمد فاتح سلطنت عثمانیہ میں عبادت گاہوں اور تاریخی مقامات پر توجہ دیتے تھے۔

انہوں نے کہا کہ استنبول ایک بار پھر ثابت کر رہا ہے کہ یہاں کئی مذاہب اور ثقافتیں پرامن طریقے سے اکھٹے رہ سکتی ہیں۔ چرچ کی بحالی عالمی کمیونٹی کو ایک اہم پیغام دیتی ہے۔ہم نے معابدوں اور کنیساؤں کی بحالی کے لیے کام اور کوششیں کی ہیں کیونکہ ہم مذہبی آزادی پر عملی یقین رکھتے ہیں

ایردوان نے کہا ہم مساجد اور چرچ کی بحالی کے کام کئی ممالک میں کر رہے ہیں، اس وقت دنیا بھر میں 5000 تاریخی مقامات کی بحالی پر کام کر رہے ہیں، بلغاریہ کے ساتھ تعاون کا معاہدہ ہے کہ وہ صوفیا شہر میں موجود تاریخی مسجد قاضی سیف اللہ کو بحال کرے گی۔

انہوں نے اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ یہ تعاون باقی منصوبوں پر بھی مثبت اثرات ڈالے گا اور لوگ اطمینان سے عبادت کر سکیں گے۔

سیواتی سٹیفن کو دنیا میں لوہے سے بنے واحد چرچ کے نام سے پہچانا جاتا ہے مگر مناسب دیکھ بھال نہ ہونے کی وجہ سے اسکی صورتحال ناگفتبہ تھی۔ ترکی اور بلغاریہ نے ایک مشترکہ منصوبے کے تحت اسکی بحالی کا کام آج سے کوئی سات برس قبل شروع کیا ۔ مشہور تاریخی قصبے بالات میں واقع چرچ کی بحالی کی ذمہ داری استنبول میں بسنے والے بلغاریوں کی ایک تنظیم کے سپرد کی گئی۔

صدر ایردوان کی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے اس چرچ کی بحالی نو شروع کی گئی تھی جو سات سال میں مکمل ہوئی۔

تبصرے
Loading...