ایردوان، روحانی کا ٹیلی فونک رابطہ، کرد علاقائی حکومت کے ریفرنڈم پر تبادلہ خیال

0 177

ترک صدر رجب طیب ایردوان نے کرد علاقائی حکومت کے تحت عراقی سرحدوں میں ہونے والے متنازعہ ریفرنڈم پر ایرانی ہم منصب حسن روحانی سے ٹیلی فون پر بات چیت کی ہے۔

ترک صدارتی آفس سے جاری پریس ریلیز کے مطابق دونوں رہنماؤں نے یہ نوٹ کیا کہ ریفرنڈم کو منسوخ نہ کرنے سے خطے کو مزید انتشار کا سامنا کرنا پڑے گا اور انہوں نے عراق کی علاقائی سالمیت کی اہمیت پر بھی  زور دیا۔

شمالی عراقی کرد صوبے مقامی "کرد علاقائی حکومت” کے ماتحت ہیں۔ کے آر جی اور مرکزی حکومت کے تحت چلنے والے کچھ علاقوں پر کرد علاقائی حکومت کے تحت عراق کی مرکزی حکومت سے علیحدگی کے لیے متنازعہ ریفرنڈم کروایا جا رہا ہے۔

بغداد حکومت کے ساتھ ساتھ ترکی، ایران، امریکا اور اقوام متحدہ بھی اس متنازعہ ریفرنڈم کے خلاف بیانات جاری کر چکی ہے۔ جبکہ عراقی حکومت نے ریفرنڈم کو پرتشدد صورت حال میں بدلنے کی صورت فوجی کارروائی کی دھمکی بھی دی ہے۔

کرد علاقائی حکومت کے صدر مسعود بارزانی کہہ چکے ہیں کہ ریفرنڈم میں "ہاں” کی برتری سے آزادی کے علامیے کا خود بخود اظہار نہیں ہو جائے گا بلکہ اس کی روشنی میں بغداد حکومت سے مزید مذاکرات کیے جائیں گے۔

تبصرے
Loading...