صدر ایردوان نے ترکی کا خصوصی سیکیورٹی اجلاس بلا لیا

0 790

صدر رجب طیب ایردوان نے جمعرات کے روز ترکی کا خصوصی سیکیورٹی اجلاس بلایا ہے۔ جس میں وہ ممکنہ طور پر روس کے یوکرائن پر حملے کے بعد کی صورت حال کو ایجنڈا کا حصہ بنائیں گے۔

اس سے قبل ترک صدر اپنا چار روزہ دورہِ افریقہ مختصر کرتے ہوئے ترکی واپس پہنچے تھے۔

وزیر دفاع حلوصی آقار، اعلیٰ سطحی کمانڈرز اور انٹیلی جنس حکام کی اجلاس میں شرکت متوقع ہے۔

بدھ کے روز، صدرایردوان نے پرامن رہنے کی ضرورت پر روشنی ڈالی اور کہا کہ روس اور یوکرین کے درمیان جاری کشیدگی کے درمیان ترکی دونوں ممالک کے ساتھ تعلقات برقرار رکھے گا۔

نیٹو کا رکن ترکی، جو بحیرہ اسود میں یوکرین اور روس دونوں کے ساتھ سمندری سرحد رکھتا ہے، اپنے دونوں پڑوسیوں کے ساتھ اچھے تعلقات رکھتا ہے اور اس نے بحران میں ثالثی کی پیشکش بھی کی تھی، جبکہ ماسکو کو یوکرین پر حملہ کرنے کے خلاف خبردار کیا ہے۔

ترکی اس پیش رفت کو قریب سے دیکھ رہا ہے اور کیف اور ماسکو دونوں کے ساتھ قریبی رابطے میں ہے۔ دفاع اور توانائی پر تعاون کرتے ہوئے، ترکی نے شام اور لیبیا میں ماسکو کی پالیسیوں کے ساتھ ساتھ 2014ء میں جزیرہ نما کریمیا کے الحاق کی مخالفت کی ہے۔ اس نے روس کو ناراض کرتے ہوئے یوکرین کو جدید ترین ڈرون بھی فروخت کیے ہیں۔

تبصرے
Loading...
%d bloggers like this: