ایردوان سوئٹزرلینڈ اور ملائیشیا کا دورہ کریں گے

0 295

صدر رجب طیب ایردوان اگلے ہفتے عالمی ہجرت فورم میں شرکت کے لیے سوئٹزرلینڈ کا سفر کریں گے جس کے بعد وہ کوالالمپور اجلاس میں شرکت کے لیے ملائیشیا جائیں گے کہ جہاں اسلامی دنیا کے حالات پر گفتگو ہوگی۔

ایوانِ صدر سے جاری ہونے والے بیان کے مطابق صدر سوموار سے جنیوا کا سفر کریں گے کہ جہاں وہ دو روزہ عالمی ہجرت فورم میں شرکت کریں گے کہ جو مہاجرین کے عالمی معاہدے کے عملی نفاذ پر بات کرے گا۔

فورم تعلیم، روزگار، توانائی، بنیادی ڈھانچے اور تحفظ کے حوالے سے بوجھ کو ہلکا کرنے اور ذمہ داریاں تقسیم کرنے جیسے شعبوں پر توجہ کرے گا۔

اسے اقوام متحدہ کے ادارۂ مہاجرین اور حکومت سوئٹزرلینڈ نے مشترکہ طور پر منعقد کیا ہے۔ صدر کوسٹاریکا، پاکستان، جرمنی اور ایتھوپیا کے صدور کے ساتھ اجلاس کی صدارت کریں گے کہ جس کی دعوت مہاجرین کے لیے اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر فلپو گرینڈی نے دی ہے۔

صدر ایردوان فورم کے موقع پر مختلف رہنماؤں سے ملاقاتیں بھی کریں گے۔

اجلاس کے شرکاء ممکنہ طور پر مہاجرین کی میزبانی کے لیے اپنے اعلانات کریں گے، جس میں صدر ایردوان ترکی میں شامی مہاجرین کے حالات کا خاص ذکر کریں گے۔

ترکی، جو اس وقت دنیا میں مہاجرین کا سب سے بڑا میزبان ہے، بین الاقوامی برادری سے مطالبہ کرتا رہا ہے کہ اس بوجھ کو باہم تقسیم کیا جانا چاہیے۔ ترکی اس وقت 36 لاکھ شامی مہاجرین رکھتا ہے، جو دنیا میں کسی بھی ملک سے زیادہ ہیں۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق انقرہ اب تک مہاجرین پر 40 ارب ڈالرز خرچ کر چکا ہے۔

18 دسمبر کو صدر مملکت کوالالمپور میں "قومی تحفظ میں ترقی کا کردار” کے عنوان سے اسلامی اجلاس میں شرکت کے لیے ملائیشیا کا سفر کریں گے۔

قطر، ایران، پاکستان اور انڈونیشیا کے نمائندے اس کانفرنس یں شرکت کریں گے۔

ترکی، پاکستان اور ملائیشیا اسلاموفوبیا کے خلاف جدوجہد کے لیے ایک انگریزی ٹیلی وژن چینل شروع کرنے کا اعلان کر چکے ہیں کہ جو دنیا بھر میں چلایا جائے گا۔

تبصرے
Loading...