مسلمانوں کے درمیان نسلی، لسانی اور فرقہ وارانہ تفریق کو ہوا دی جا رہی ہے، صدر ایردوان

0 92

چھٹے مذہبی فورم کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صدر رجب طیب ایردوان نے کہا ہے کہ "مسلمانوں کے درمیان نسلی، لسانی اور فرقہ وارانہ تفریق کو مزید ہوا دی جا رہی ہے اور نتیجتاً اُن کے دلوں میں عدم اتفاق کا بیج بویا جا رہا ہے کہ جو ایک مذہب سے تعلق رکھتے ہیں، ایک نبی اور ایک کتاب کو ماننے والے ہیں اور دن میں پانچ مرتبہ ایک ہی قبلے کی طرف منہ کرکے عبادت کرتے ہیں۔”

صدر طیب ایردوان نے چھٹے مذہبی فورم کی اختتامی تقریب سے خطاب کیا۔

"ہمیں مذاہب کی ہر طرح کی توہین کے خلاف پرخلوص جدوجہد کرنی چاہیے”

"FETO اور داعش سے ملنے والا تجربہ ثابت کرتا ہے کہ ہمارے لیے یہ ضروری ہے کہ مذاہب کی ہر قسم کی توہین کے خلاف پرخلوص جدوجہد کرنی چاہیے،” صدر ایردوان نے زور دیا کہ مذہب کی حقیقی تعلیم حاصل کرنے والے کبھی مذاہب کی توہین کرنے والوں کی تائید نہیں کرتے۔

"مسلمانوں کے درمیان نسلی، لسانی اور فرقہ وارانہ تفریق کو مزید ہوا دی جا رہی ہے اور نتیجتاً اُن کے دلوں میں عدم اتفاق کا بیج بویا جا رہا ہے کہ جو ایک مذہب سے تعلق رکھتے ہیں، ایک نبی اور ایک کتاب کو ماننے والے ہیں اور دن میں پانچ مرتبہ ایک ہی قبلے کی طرف منہ کرکے عبادت کرتے ہیں۔”

تبصرے
Loading...