گولن دہشتگرد تنظیم کی صدر ایردوان کو ایک بار پھر قتل کرنے کی کوشش ناکام

0 163

ترک میڈیا کے مطابق فتح اللہ گولن دہشتگرد تنظیم کے دو ممبر گرفتار ہوئے ہیں جو صدر رجب طیب ایردوان کو قتل کرنے کے منصوبے پر عمل کرنا چاہ رہے تھے۔ جمعہ کے روز گرفتار ہونے والے ان افراد کو ایک کار میں پکڑا گیا جو صدر ایردوان کے روٹ میں دخل انداز ہونے کے لیے تیار کھڑی تھی۔ کار سے جدید گنیں، ہتھکڑیاں اور بلٹ پروف جیکٹس بھی برآمد ہوئی ہیں۔

ترک سرکاری خبر رساں ایجنسی اناطالیہ نے البتہ اپنی رپورٹنگ میں یہ ظاہر نہیں کیا کہ یہ منصوبہ بندی صدر ایردوان کو قتل کرنے کی تھی۔

اس سے قبل 15 جولائی کی ناکام بغاوت کے دوران صدر ایردوان کو قتل کرنے کی دو کوششیں کی گئیں تھیں جو ناکام ہوئیں۔

صدر ایردوان نے واقعہ پر تبصرہ کرتے ہوئے استنبول میں میڈیا سے بات کی اور کہا کہ سیکیورٹی ادارے واقعہ کی تحقیقات کر رہے ہیں۔ فتح اللہ گولن دہشتگرد تنظیم نے مجھے اور میرے ساتھیوں کو دھمکیاں دے رکھی ہیں۔ تاحال اس بارے کوئی اطلاع نہیں ہے”۔

یہ گرفتاری امریکی نژاد فتح اللہ گولن کی اس وڈیو ٹیپ کے چند ہفتوں بعد ہوئی ہیں جس میں وہ بلواسطہ طور پر صدر ایردوان کو قتل کرنے کے احکامات جاری کر رہا تھا۔ وڈیو ٹیپ میں اس نے کہا تھا کہ "کچھ حلقے” بہت جلد ترکی میں ایک بڑا قتل کریں گے۔ گولن نے وڈیو ٹیپ میں مزید کہا، "انہوں نے کچھ مزید سنجیدہ کرنے کی منصوبہ بندی کی ہے۔ وہ کہہ رہے ہیں کہ ہم چند اہم لوگوں کو قتل کریں گے۔ یہ بات بند کمرے میں ہر شخص کر رہا ہے”۔

تبصرے
Loading...