اعداد و شمار سے ظاہر ہوتا ہے کہ ترکی نے وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پا لیا ہے، وزیر صحت

0 1,062

وزیر صحت فخر الدین کوجا نے کہا ہے کہ ترکی کروناوائرس کی وباء کے خلاف جدوجہد میں ہر گزرتے دن کے ساتھ پیش رفت کر رہا ہے اور اعداد و شمار ظاہر کرتے ہیں کہ وائرس کا پھیلاؤ اب قابو میں ہے۔

بدھ کروناوائرس سائنس بورڈ کے ایک طویل اجلاس کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر نے کہا کہ آج جو اعداد و شمار سامنے آئے ہیں وہ تصدیق شدہ مریضوں کی تعداد میں بڑی کمی کو ظاہر کرتے ہیں۔

وزیر کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں میں ملک میں 3,083 نئے کیس سامنے آئے ہیں جو منگل کے 4,611 کیسز سے کم ہیں۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ 117 مزید اموات کے ساتھ ملک میں COVID-19 سے مرنے والے افراد کی تعداد 2,376 تک پہنچ چکی ہے۔

فخر الدین کوجا نے کہ اکہ انتہائی نگہداشت میں موجود مریضوں کی تعداد میں بھی کچھ کمی آئی ہے۔ اس وقت 1,814 مریض ICU میں ہیں جن میں سے 985 وینٹی لیٹرز پر ہیں۔

اب تک صحت یاب ہوکر ہسپتالوں سے رخصت ہونے والے مریضوں کی تعداد 16,477 ہو گئی ہے، جن میں سے صرف منگل کو ہی 1,559 مریض اپنے گھروں کو گئے۔

مجموعی طور پر تعداد میں کمی کی وجہ سے انتہائی نگہداشت کے یونٹس میں مریضوں کی تعداد گھٹتے ہوئے 60 فیصد تک آ گئی ہے۔ یعنی یہ وارڈز اب چالیس فیصد خالی ہیں۔ جب مرض اپنے عروج پر پہنچا تو ہسپتالوں کے بستروں میں مریضوں کی تعداد 70 فیصد تک گئی جو اب 30 فیصد ہے۔ جہاں تک آئی سی یوز کا معاملہ ہے تو ان میں مریضوں کی شرح 80 فیصد سےکم ہوکر اب 60 فیصد ہو گئی ہے۔

واضح رہے کہ کئی یورپی ممالک اور امریکا میں فٹ بال اسٹیڈیم اور دیگر کھیلوں کے میدانوں کو فیلڈ ہسپتالوں میں تبدیل کیا گیا ہے، جبکہ ترکی کے جامع ہیلتھ کیئر سسٹم کی وجہ سے اس کی نوبت نہیں آئی۔

گو کہ وزیر صحت نے ایک امید دلائی ہے لیکن انہوں نے ساتھ ہی شہریوں کو خبردار کیا کہ وہ وقت سے پہلے جشن نہ منائیں اور زور دیا کہ وہ رمضان کے مہینے میں ہوشیار رہیں۔انہوں نے عوام سے مطالبہ کیا کہ وہ اجتماعی افطار اور سماجی تقریبات سے گریز کریں۔

تبصرے
Loading...