چین کے لیے برآمدات لے کر پہلی مال گاڑی جلد روانہ ہوگی

0 341

ترک سرکاری ریلویز (TCDD) کے سربراہ نے کہا ہے کہ چین کو ترک مصنوعات کی ترسیل کے لیے ترکی ایک مال گاڑی بھیجنے کا منصوبہ بنا رہا ہے جو دونوں ممالک کے مابین تجارتی حجم کو بڑھانے کے لیے ریل رابطے استعمال کرنے کی کوشش کا حصہ ہے۔

TCDD کے جنرل مینیجر علی احسان اوئیگون نے کہا کہ ترک اور چینی حکام مڈل لائن کوریڈور کھولنے اور بیلٹ اینڈ روڈ منصوبے (BRI) کے تحت چین کو برآمدات کرنے کے خواہشمند ترک کاروباری افراد کے لیے نئے مواقع تخلیق کرنے کے لیے مذاکرات کر رہے ہیں۔

نومبر میں چین سے یورپ جانے والی پہلی مال گاڑی استنبول کی مرمرہ سرنگ سے گزری، جو "ریلوے شاہراہِ ریشم” کے خواب کی حقیقت تھی۔ چین کی ریلوے ایکسپریس بذریعہ ترکی چیک جمہوریہ کے دارالحکومت پراگ کو براہ راست وسطی صوبہ شان سی کے دارالحکومت سیان سے جوڑے گی۔

ترکی کا ہدف چین کے ساتھ تجارتی حجم کو بڑھانا اور بیجنگ سے لندن تک پھیلے مڈل کوریڈور اور قزاقستان سے ترکی تک پھیلے ریلوے ٹریک ‘آئرن سلک روڈ’ میں اپنی جغرافیائی حیثیت کا بہترین استعمال کرتے ہوئے ترک برآمدات کے لیے نئے مواقع تخلیق کرنا ہے۔

اوئیگون نے کہا کہ وہ باربرداری اور مال برداری میں اضافے کے لیے آئرن سلک روڈ کو جوڑنے والے ممالک سے مذاکرات کر چکے ہیں۔ "ترکی کو اپنی مصنوعات برآمد کرنے کے لیے آئرن سلک روڈ، جسے ہم مڈل کوریڈور کہتے ہیں، کو مکمل آپریشنل کرنے کی ضرورت ہے۔ ”

اوئیگون نے کہا کہ شریک ممالک کے ساتھ مذاکرات کو حتمی صورت دے کر مال گاڑی کے ذریعے ترک برآمدات چین بھیجنے کے منصوبے کو حتمی صورت دی جا چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ TCDD اس منصوبے کے لیے نجی شعبے کے ساتھ تعاون بھی کر رہی ہے۔

2020ء میں 300 سے زیادہ چینی ٹرینیں

اوئیگون نے پچھلے ہفتے چینی حکام کے ساتھ ملاقات کے بعد کہا تھا کہ یورپ جانے والی چینی ٹرینوں کی تعداد 2020ء تک 300 تک پہنچنے کا امکان ہے اور اگلے چار سالوں میں یہ 1,000 ہو جائیں گی۔

انہوں نے کہا کہ چائنا ریلوے ایکسپریس کی جانب سے ترک ریلوے کے استعمال کو محض گزرگاہ نہیں سمجھنا چاہیے۔ "اس کا مطلب ہے چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباری اداروں کے لیے اپنی مصنوعات کو چین کی مارکیٹ تک رسائی دینے کی صلاحیت مل جانا۔”

ترکی اپنے جغرافیائی حیثیت کی وجہ سے ارب ہا ڈالرز کے اس منصوبے BRI سے زیادہ سے زیادہ فائدہ سمٹنے کی کوشش کر رہا ہے۔ یہ منصوبہ 65 ممالک میں 3 ارب لوگوں تک پہنچنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ منصوبے کے مڈل کوریڈور میں واقع ترکی بیجنگ اور لندن کے درمیان مالی لحاظ سے سب سے موزوں راستہ ہے۔

تبصرے
Loading...