ترکش ایئرلائنز، جون سے پروازوں کے دوبارہ مرحلہ وار آغاز کا منصوبہ

0 432

ترکش ایئرلائنز نے جون، جولائی اور اگست کے لیے ایک فلائٹ پلان ترتیب دیا ہے جس میں جدید کرونا وائرس کی وجہ سے معطل ہونے والی اندرون و بیرونِ ملک پروازوں کے دوبارہ آغاز کا منصوبہ بنایا گیا ہے۔ اس وباء نے عالمی ہوا بازی صنعت کو بُری طرح متاثر کیا ہے کیونکہ حکومتوں نے وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے سفر پر پابندیاں عائد کر رکھی ہیں۔

ذرائع کے مطابق ترکی کی قومی پرچم بردار ایئرلائن اندرونِ ملک پروازوں کا آغاز جون میں کرے گی اور اس کے بعد مرحلہ وار بین الاقوامی پروازیں کھولی جائیں گی۔

تین مہینے کے فلائٹ پلان کے مطابق میں ترکش ایئرلائنز 19 ممالک کے 22 مقامات کے لیے ہفتہ وار 75 پروازیں چلائے گی کہ جن میں کینیڈا، قزاقستان، افغانستان، جاپان، چین، جنوبی کوریا، سنگاپور، ڈنمارک، سوئیڈن، جرمنی، ناروے، آسٹریا، نیدرلینڈز، بیلجیئم، بیلاروس، اسرائیل، کویت، جارجیا اور لبنان شامل ہیں۔

ایئرلائن اندرونِ ملک تمام مقامات کے لیے 60 فیصد پروازیں چلائی گی، جس کے بعد جولائی اور اگست میں مزید مقامات شامل کیے جائیں گے۔

بین الاقوامی منزلوں اور پروازوں کی تعداد جولائی میں بالترتیب 103 اور 572 اور اگست میں 160 اور 937 کر دی جائے گی۔

ترکش ایئرلائنز نے 28 مئی کو covid-19 کے خلاف حفاظتی اقدام کے طور پر اپنی تمام مقامی و بین الاقوامی پروازیں معطل کر دی تھیں۔

اس وباء سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والی صنعتوں میں سے ایک ہوا بازی کی صنعت ہے، جس نے 185 ممالک اور خطوں کو متاثر کیا ہے اور اب تک 3.66 ملین افراد اس سے بیمار ہو چکے ہیں۔ ترکی میں اب تک 1,29,491 کروناوائرس کے کیس سامنے آئے ہیں جبکہ 73,285 افراد صحت یاب ہو چکے ہیں۔

ترکی کے لیے حالات کو معمول پر لانے کامرحلہ وار عمل شروع ہونے والا ہے کیونکہ کروناوائرس کے خلاف جنگ کامیاب ثابت ہوئی ہے اورحالیہ چند دنوں میں ملک میں صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد نئے مریضوں سے بڑھ گئی ہے۔

ترکش ایئرلائنز کے گزشتہ بیان کے مطابق جنوری سے مارچ کے دوران مسافروں کی تعداد 20 فیصد کمی کے ساتھ 13.4 ملین ہوئی ہے، جو 2019ء میں اسی سہ ماہی میں 16.7ملین تھی۔

دوسری جانب کمپنی نے اس عرصے میں مسافر پروازوں کو کارگو فلائٹس میں تبدیل کیا ہے۔

تبصرے
Loading...