خطے میں بڑھتا ہوا تناؤ، ترک وزیر خارجہ عراق کا دورہ کریں گے

0 324

امریکا اور ایران کے مابین بڑھتے ہوئے تناؤ کے ماحول میں ترکی کے وزیر خارجہ جمعرات کو عراق کا باضابطہ دورہ کریں گے۔

وزارت خارجہ کے بدھ کو جاری ہونے والے ایک بیان کے مطابق وزير خارجہ مولود چاؤش اوغلو "خطے میں حالیہ واقعات کے بعد بڑھتے ہوئے تناؤ کو کم کرنے کے لیے ترکی کی سفارتی کوششوں کے حصے کے طور پر” 9 جنوری کو عراق میں ہوں گے۔

اس بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ "اس دورے میں خطے میں حالیہ پیش رفت، ساتھ ہی دو طرفہ معاملات، پر غور و خوض کیا جائے گا”

قبل ازیں، جمعے کو ایران کے پاسدارانِ انقلاب کی اہم ترین قدس فورس کے سربراہ جنرل قاسم سلیمانی بغداد میں ایک امریکی ڈرون حملے میں مارے گئے تھے۔

ان کی موت نے امریکا اور ایران کے مابین تناؤ میں ڈرامائی اضافہ کر دیا ہے، جو ویسے ہی تہران اور عالمی طاقتوں کے مابین ہونے والے نیوکلیئر معاہدے کے 2018ء میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے یکطرفہ طور پر ختم کرنے کے بعد کشیدہ تھے۔

ایران کے رہبرِ معظم علی خامنہ ای، جنہوں نے پچھلے سال سلیمانی کو ملک کا اعلیٰ ترین اعزاز دیا تھا، نے ان کے قتل کا "سخت انتقام” لینے کا عزم ظاہر کیا۔

بدھ کو علی الصبح پاسدارانِ انقلاب نے عراق میں امریکی اور اتحادی افواج کے اڈوں پر درجن سے زیادہ بیلسٹک میزائل داغے۔

تبصرے
Loading...