استنبول دھماکے کی فوٹیج میں اسرائیلیوں کو مشتبہ بمبار کے ساتھ دیکھا گیا

0 881
اتوار کو ترکی کے شہر استنبول میں دو اسرائیلی فوجی خواتین کو اس مشتبہ دہشت گرد کے ساتھ ساتھ چلتے ہوئے دیکھا گیا ہے جس نے مبینہ طور پر دھماکہ خیز مواد استقلال اسٹریٹ کے اندر رکھا تھا۔

شہر کے تقسم اسکوائر کے قریب مصروف شاپنگ استقلال اسٹریٹ میں بم دھماکے میں کم از کم آٹھ افراد جاں بحق اور 80 سے زائد زخمی ہوگئے۔

اشدود کے رہائشی یاتیدگی اور نٹالی سوئسا ترکی میں چھٹیاں گزار رہے تھے جب سیکورٹی کیمرے نے انہیں مشتبہ خاتون بمبار کے ساتھ چلتے ہوئے پکڑ لیا۔ اطلاعات کے مطابق اسی رات پولیس آپریشن سے قبل ہی اسرائیل واپس جانے والی پرواز میں وہ سوار ہو چکی تھیں۔
اتیگی کے شوہر اور سوئسا کے بھائی لیران نے مقامی خبر رساں ادارے  کو بتایا کہ دونوں "کم از کم آٹھ دیگر اسرائیلی خواتین کے ساتھ سفر کر رہی تھیں، اور وہ آخری دن ایک دوسرے سے الگ ہو گئے تھے تاکہ خریداری کر سکیں”۔
"میری اہلیہ اور میری بہن مرکزی چوک میں مشتبہ دہشت گرد کے قریب سے اس کو جانے بغیر چل پڑیں۔ جب وہ ایک قریبی اسٹور میں چند لمحوں کے لیے رکیں تو اس نے انھیں نظرانداز کیا تاہم جب وہ باہر نکلیں تو ایک زور دار دھماکہ ہوا، شاید 50 میٹر کے فاصلے پر۔”
جائے وقوعہ سے فوٹیج میں دو اسرائیلیوں کی شناخت ہونے کے بعد، انٹرنیٹ پر افواہیں اور سازشی نظریات ابھرنے لگے اور بتایا گیا کہ دونوں کا تعلق اسرائیلی فوج سے تھا۔ تاہم ابھی تک کسی قسم کی تصدیق یا تردید نہیں ہو سکی ہے۔
تبصرے
Loading...
%d bloggers like this: