غلطہ ٹاور کو عجائب گھر میں تبدیل کر دیا جائے گا

0 242

استنبول کے مشہورِ زمانہ غلطہ ٹاور کو عجائب گھر میں تبدیل کرنے سے پہلے فی الوقت اس کی تزئین و آرائش کی جا رہی ہے۔ سیاحوں میں مقبول اس ٹاور کو کہ جس سے شہر کا طائرانہ منظر نظر آتا ہے، 15 ستمبر کو دوبارہ کھول دیا جائے گا۔

اسے حال ہی میں سرکاری ڈائریکٹوریٹ جنرل آف فاؤنڈیشنز کے حوالے کیا گیا تھا اور حکام کا منصوبہ تھا کہ وہ ٹاور میں موجود ریستوران اور کیفے کو بند کر دے جو استنبول بلدیہ کی ایک کمپنی چلاتی تھی۔ ثقافت و سیاحت کے وزیر محمد نوری ارصوی نے حال ہی میں کہا تھا کہ وہ ٹاور کی ہر منزل پر نمائش گاہ بنائیں گے۔

شہر کے یورپی علاقے میں واقع یہ 67 میٹر (220 فٹ) بلند ٹاور 1348ء میں پہرے داروں کے لیے مینار کی حیثیت سے بنایا گیا تھا اور بعد میں عثمانی عہد میں اسے آگ لگنے کے واقعات کے لیے ایک مشاہدے کی چوکی بنایا گیا تھا۔ آج اس کی اونچائی سے شاخِ زریں کا شاندار نظارہ ملتا ہے۔ یہ ٹاور اپنی تعمیر کے وقت شہر کی بلند ترین عمارت تھا، جسے 19 ویں صدی سے اب تک متعدد بار بحال کیا گیا ہے کہ جب اسے آگ لگنے سے نقصان پہنچا تھا۔ اس کی آخری بحالی 1960ء کی دہائی میں ہوئی کہ جب اس کی چھت تعمیر کی گئی اور اس کی اندر لکڑی کی جگہ کنکریٹ کے ڈھانچے کو دی گئی۔

تبصرے
Loading...