عالمی امن اور علاقائی تعاون پر دوسرا بین الاقوامی سمپوزیم استنبول میں ہوگا

0 1,611

ساؤتھ ایشین سینٹر فار اسٹریٹجک اسٹڈیز (GASAM) اور لاہور پیس ریسرچ سینٹر (LCPR) کے زیر اہتمام 27 اپریل 2019ء کو عالمی امن اور علاقائی تعاون پر دوسرا بین الاقوامی سمپوزیم استنبول میں منعقد ہوگا۔ اس سمپوزیم کا موضوع "بین العلاقائی تعاون کا ظہور: استحکام و طریقے کے راستے کا تعین” ہوگا۔

سمپوزیم میں افتتاحی تقریر GASAM کے چیئرمین جمال دمیر اور LCPR کے بورڈ چیئرمین ڈاکٹر مجاہد منصوری کریں گے۔ کوسوو کے نائب وزیر اعظم انور خوجہ، پاکستان کے وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود، پاکستان کے سفیر برائے ترکی محمد سائرس سجاد قاضی، استنبول کے ڈپٹی میئر اور ترکی-مالدیپ بین الپارلیمانی فرینڈشپ گروپ کے چیئرمین عفت پولات، ترکی پاکستان بین الپارلیمانی فرینڈشپ گروپ کے چیئرمین علی شاہین اور کئی دیگر بین الاقوامی شخصیات اس سمپوزیم میں شرکت کریں گی۔ امریکا، آذربائیجان، چین، فرانس، کوسوو، ملائیشیا، پاکستان، پولینڈ، رومانیہ اور ترکی کے سیاست دان، علمی شخصیات، بین الاقوامی تعلقات کے ماہرین، صحافی، مختلف اداروں اور انجمنوں کے نمائندے بھی شریک ہوں گے۔

سمپوزیم کا پہلا سیشن "عالمی امن اور علاقائی سلامتی کے مسائل” کے موضوع پر ہوگا جس کے ماڈریٹر پاکستان کے پروفیسر ڈاکٹر حسن عسکری رضوی ہوں گے۔ اس سیشن میں ترکی کی پولیس اکیڈمی سے ڈاکٹر محمد اوزقان، امریکا کی فلوریڈا اسٹیٹ یونیورسٹی سے ڈاکٹر اسٹیو میک ڈوویل، بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی ملائیشیا سے ڈاکٹر ارشد اسلام، اکنامک اینڈ سوشل ڈیولپمنٹ سینٹر، آذربائیجان سے ڈاکٹر ووگار بیراموف اور فرانس کی وزارت امورِ داخلہ کے علاقائی ڈائریکٹر ڈاکٹر رافیل لی میہو شرکت کریں گے۔

دوسرا سیشن "عالمی امن اور علاقائی تعاون” کے موضوع پر ہوگا جس کے ماڈریٹر ترکی-پاکستان فرینڈشپ اینڈ کلچرل ایسوسی ایشن کے چیئرمین ڈاکٹر برہان کایاترک ہوں گے جبکہ پینل میں ابن خلدون یونیورسٹی ترکی سے ڈاکٹر طلحہ کوسے، ووہان، چین کی چائنا یونیورسٹی آف جیوسائنسز سے ڈاکٹر جیانگ فینگ لی، پولینڈ کی بزنس اینڈ مینجمنٹ یونیورسٹی سے ڈاکٹر رافیل اوزاروسکی، رومانیہ کے آزاد محقق ڈاکٹر ایندریا کرادیلی اور ترکی کی استنبول یونیورسٹی سے ڈاکٹر سعادت گلدن ایمن شرکت کریں گے۔

سمپوزیم میں شرکت کی دعوت عام ہے۔

تبصرے
Loading...