ترکی کا سائبیریا – منفی 30 ڈگری کا حامل "گولے”

0 1,322

گولے ضلع اردہان ترکی کی سرد ترین بستیوں میں سے ایک ہے۔ گذشتہ ہفتے، گولے کا درجہ حرارت منفی 20 ڈگری سینٹی گریڈ اور منفی 25 ڈگری سینٹی گریڈ کے درمیان تھا، یہاں تک کہ منفی 30 ڈگری تک جا رہا ہے۔

2030 میٹر کی بلندی اور 1,440 مربع کلومیٹر رقبے کے ساتھ، گولے کے مرکز میں تقریباً 6,700 لوگ رہتے ہیں جبکہ اس کے نواحی دیہاتوں میں تقریباً 25,000 باشندے بستے ہیں۔

وہ ضلع جہاں سرد موسم تقریباً ہر موسم سرما کے ریکارڈ توڑ دیتا ہے حال ہی میں اس موسم کے سرد ترین دن گزر رہے ہیں۔

گولے میں اوسطاً درجہ حرارت منفی 20 سے منفی 25 تک رہتا ہے تاہم گزشتہ دنوں یہ درجہ حرارت منفی 30 سے بھی نیچے گر گیا تھا۔ اس وجہ سے شہر میں لگے فوارے جم گئے اور درخت ٹھنڈ سے ڈھکے ہوئے تھے جبکہ گاڑیاں مشکل سے آگے بڑھ سکتی تھیں۔ مقامی آبادی نے اسے "ترکی کا سائیبریا” قرار دیا۔

 

 

مقامی لوگوں میں سے ایک، علاء الدین کلیچ نے کہا کہ درجہ حرارت -24 سینٹی گریڈ ہے، یہاں تک کہ رات کے وقت -30 ڈگری سینٹی گریڈ سے بھی آگے جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم منجمد ہیں، یہاں تک کہ ہمارے گھروں میں پانی بھی جم گیا ہے۔

ایک اور مقامی، کریم  چادرجی نے کہا کہ محسوس ایسے ہوتا ہے کہ جو درجہ حرارت محکمہ موسمیات کی طرف سے بتایا گیا تھا، حقیقت میں موسم زیادہ سرد ہے۔ انصار کریدگے، جو گولے میونسپلٹی میں صفائی کرنے والے کے طور پر کام کرتے ہے، انہوں نے کہا کہ یہاں تک کہ کچرا جم گیا ہے۔

تبصرے
Loading...
%d bloggers like this: