غزہ: حماس کے سیکیورٹی سربراہ قاتلانہ حملے میں بچ نکلے

0 219

 

File Photo: Reuters

غزہ کی وزارت داخلہ کے مطابق حماس کے زیر انتظام غزہ کی سیکیورٹی فورس کے سربراہ پر قاتلانہ حملہ کیا گیا ہے جس سے وہ بچ نکلے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق غزہ کی داخلی سیکیورٹی فوج کے ڈائریکٹر جنرل توفیق ابو نعیم پر جمعہ کے روز اس وقت ناکام قاتلانہ حملہ کیا گیا جب ان کی گاڑی نصریات مہاجر کیمپ میں داخل ہوئی۔

وزرات داخلہ کی پریس ریلیز میں بتایا گیا ہے کہ انہیں معمولی درجے پر زخمی ہوئے جن کا ہسپتال میں علاج کیا گیا۔ مزید بتایا گیا ہے کہ سیکیورٹی سروس نے واقعہ کی نوعیت اور اس کے منصوبہ سازوں کو پکڑنے کے لیے تحقیقات شروع کر دی ہیں۔

واقعہ اس وقت پیش آیا ہے جب غزہ کے اہل اقتدار حماس نے انتظامی طاقت ویسٹ بنک کی فلسطینی اتھارٹی کو منتقل کرنا شروع کر دی ہے جو فلسطینی صدر محمود عباس کے زیر قیادت چلایا جا رہا ہے۔

فلسطینی تحریکوں کے دو بڑے حریفوں نے اس ماہ ایک تاریخی معاہدے پر دستخط کیے تھے کس نے فلسطین کو متحد  اور دہائیوں پر مشتمل چقبلش کا خاتمہ کرنا تھا۔

معاہدے کی رو سے فلسطینی اتھارٹی یکم دسمبر تک غزہ کی پٹی کا انتظام سنبھال لے گی۔ اس سے قبل حماس نے گزشتہ مہنیوں میں ابتر انسانی بحران کا سامنا کیا جس میں اسرائیلی محاصرے کی وجہ سے غزہ میں کھانے پینے اور بجلی ناپید ہو رہی تھی۔

تبصرے
Loading...