ڈجیٹل معیشت، ڈجیٹل تجارت، ڈجیٹل ترکی اور مستقبل کے شہر ہمارے ایجنڈے میں پیش پیش ہیں، صدر ایردوان

0 90

آزاد صنعت کاروں اور کاروباری افراد کی ایسوسی ایشن (MÜSİAD) کے اجلاس بعنوان MÜSİAD Vizyoner’19 سے خطاب کرتے ہوئے صدر رجب طیب ایردوان نے کہا ہے کہ "ڈجیٹل معیشت، ڈجیٹل تجارت، ڈجیٹل ترکی اور مستقبل کے شہر ہمارے ایجنڈے میں پیش پیش ہیں۔ اس معاملے کی اہمیت کے پیش نظر ہم نے ڈجیٹل ٹرانسفارمیشن آفس قائم کیا جو ملک کی صدارتی نظام کی جانب منتقلی کے دوران براہِ راست ایوانِ صدر سے منسلک رہا۔”

صدر رجب طیب ایردوان MÜSİAD Vizyoner’19 کے عنوان سے آزاد صنعت کاروں اور کاروباری افراد کی ایسوسی ایشن (MÜSİAD) کے اجلاس سے خطاب کر رہے تھے۔

Vizyoner’19 پروگرام کی بنیادی توجہ ڈجیٹل معیشت، ڈجیٹل تجارت، مستقبل کے شہروں اور قومی ٹیکنالوجی منصوبے پر قرار دیتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ "ڈجیٹل معیشت، ڈجیٹل تجارت، ڈجیٹل ترکی اور مستقبل کے شہر ہمارے ایجنڈے میں پیش پیش ہیں۔ ترکی کا مستقبل اِس اجلاس میں ہونے والی گفتگو سے تشکیل پائے گا۔”

"ہم ڈجیٹل دنیا کے شانہ بشانہ کے لیے پُر عزم ہیں”

"اس معاملے کی اہمیت کے پیش نظر ہم نے ڈجیٹل ٹرانسفارمیشن آفس تشکیل دیا جو حکومت کی صدارتی نظام کی جانب منتقلی کے دوران ایوانِ صدر سے براہ راست منسلک تھا،” صدر ایردوان نے مزید کہا کہ "ہمارا ہدف سائبر سکیورٹی، نیشنل سافٹ ویئر، میٹا ڈیٹا، مصنوعی ذہانت اور اہم بنیادی ڈھانچے کے تحفظ جیسے تمام متعلقہ شعبوں کی پیروی اور ہونے والی کوششوں کی مدد کرنا ہے۔”

صدر ایردوان نے گفتگو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ "چاہے ہم ڈجیٹلائزیشن کے عمل میں کتنے ہی تیز کیوں نہ ہو، ٹیکنالوجی ہمیشہ ہم سے تیز رہتی ہے۔ جب ہم پہلی بار اقتدار میں آئے تو ملک کے اندر براڈ بینڈ انٹرنیٹ رکھنے والوں کی تعداد 3 ہزار تھی۔ لیکن آج ترکی میں براڈبینڈ انٹرنیٹ رکھنے والوں کی تعداد 75 ملین سے بھی زیادہ ہے۔ اسی طرح موبائل فون صارفین کی تعداد 23 ملین سے بڑھ کر 82 ملین سے بھی تجاوز کر چکی ہے۔ فائبر آپٹک لائن کی طوالت 81 ہزار کلومیٹرز تھی جو اب 364 ہزار کلومیٹرز سے بھی بڑھ گئی ہے۔”

ڈجیٹل دنیا کے شانہ بشانہ رہنے کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے صدر ایردوان نے زور دیا کہ ترکی خلائی صنعت میں انقلابی قدم اٹھا رہا ہے اور کہا کہ "ہم نے ترک خلائی ایجنسی تشکیل دی۔ ہم 2014ء میں TURKSAT 4A اور 2015ء میں TURKSAT4B پہلے ہی لانچ کر چکے ہیں اور اب اگلے سال TURKSAT 5A اور 2021ء میں TURKSAT 5B بھیجنے کا منصوبہ بنا رہے ہیں۔ سب سے بڑھ کر یہ کہ ہم 2022ء تک ترکی کے مقامی طور پر تیار کردہ کمیونی کیشن سیٹیلائٹ TURKSAT 6A کو سروس میں لے آئیں گے۔”

تبصرے
Loading...