منبج آپریشن ضروری نہیں ہو اگر امریکہ ترکی سے کئے گئے وعدے نبھائے، ترک ڈپٹی وزیر اعظم

0 947

ترکی کے ڈپٹی وزیر اعظم فکری عشیک نے کہا ہے کہ وائے پی جی کے زیر کنٹرول منبج میں آپریشن کرنے کی ضرورت پیش نہیں آ سکتی اگر اگر امریکہ دہشتگردوں کے خاتمے سے متعلق اپنے کئے گئے نبھاتا ہے۔

این ٹی وی پر ایک لائیو پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے ڈپٹی وزیر اعظم نے کہا کہ اگر امریکہ اپنے وعدوں کو پورا کرتا ہے تو ترکی کو شام کے شہر منبج سے دہشت گردوں کا صفایا کرنے کے لئے آپریشن نہیں کرنا پڑے گا۔

عشیک نے ان وعدوں کی سرکاری حیثیت کو واضع کرتے ہوئے کہا، "انہوں نے میری وزیر دفاع کی مدت کے دوران اور اوبامہ انتظامیہ کے دور میں سینکڑوں وعدے کیے ہیں”۔

ڈپٹی وزیر اعظم نے بتایا کہ اگر امریکہ اپنے وعدے کے مطابق آگے بڑھتا ہے تو دونوں ممالک کے درمیان تعلقات بہتر ہو جائیں گی۔

انہوں نے مزید کہا، "”اگر نہیں، تو ترکی کو جو بھی ضروری ہوا، وہ کرنا پڑے گا”۔

امریکہ وائے پی جی کی مدد کرتا ہے جو تسلیم شدہ دہشتگرد تنظیم پی کے کے کی شامی شاخ ہے۔ امریکہ کی حمایت کی وجہ سے ترک امریکہ تعلقات متاثر ہوئے ہیں اور انقرہ کا واشٹنگٹن پر اعتماد ختم ہو چکا ہے۔

تبصرے
Loading...