کرونا وائرس کے نئے مریضوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ، جانچ سخت کرنے کا حکم

0 192

وزارتِ داخلہ نے ترکی کے تمام 81 صوبوں کی انتظامیہ کو حکم دیا ہےکہ وہ بڑے پیمانے پر جانچ کا کام شروع کریں کیونکہ ملک میں COVID-19 کی روزانہ کیس کسی طرح 1,000 سے کم نہیں ہو رہے۔

ماسک پہنے اور سماجی فاصلہ اختیار کرنے جیسے قوانین کے سختی سے اطلاق کو یقینی بنانے کے لیے قانون نافذ کرنے والے ادارے بھی اپنا کردار ادا کرے گی۔ زیادہ تر صوبوں میں گھر سے باہر نکلنے کے لیے ماسک پہننا ضروری ہے جبکہ حکام مصروف مقامات پر سماجی فاصلہ اختیار نہ کرنے والے افراد کو بھی متنبہ کر رہے ہیں۔ ماسک نہ پہننے پر 900 ترک لیرا کا جرمانہ بھی ہے لیکن قانون نافذ کرنے والے اہلکاروں کے گشت کےباوجود کئی شہریوں میں ماسک نہ پہننا عام ہے۔

وزارت کی ہدایات کے تحت انتظامیہ بازاروں، پبلک ٹرانسپورٹ، ٹیکسیوں، مساجد، ریستورانوں، چائے خانوں، پارکوں، شادی ہالوں، ہیئر ڈریسرز،، شاپنگ مالز، سوئمنگ پولز، جم، سینماؤں، تھیٹروں، تھیم پارکس اور دیگر مصروف مقامات کامعائنہ کریں گے کہ آیا وہاں پر سماجی فاصلے اور ماسک پہننے کے قوانین کی پیروی کی جا رہی ہے۔

ترکی میں پیر کو 1,086 نئے کرونا وائرس کیس سامنے آئے تھے جبکہ ملک میں COVID-19 سے ہونے والی اموات کی تعداد 16 کے اضافے کے ساتھ 5,241 تک جا پہنچی ہے۔ جس کی تصدیق وزیر صحت فخر الدین کوجا نے ٹوئٹر پر کی ہے۔

نئے مریضوں کی یہ تعداد پچھلے 24 گھنٹوں میں 52,193 ٹیسٹ سامنے آنے کے بعد سامنے آئی ہے۔ اس کے ساتھ ہی ترکی میں COVID-19 کے کیس 2,06,844 تک پہنچ گئی ہے۔ وزیر کا کہنا ہے کہ اتوار کو 2,315 مریض صحت یاب بھی ہوئے۔ انہوں نے خبردار کیا کہ "نئے مریضوں کی تعداد میں کمی ہو رہی ہے لیکن ہمیں احتیاط کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ اس میں مزید وقت لگے گا۔ قوانین کی خلاف ورزی کی وجہ سے ہم روزانہ ایک ہزار سے زیادہ نئے کیس دیکھ رہے ہیں۔”

وزیر صحت کے پیش کیے گئے ڈیٹا کے مطابق 1,130 مریض اب بھی انتہائی نگہداشت کے یونٹوں میں زیر علاج ہیں جبکہ 395 وینٹی لیٹرز پر ہیں۔

حالات کو معمول پر لانے کی کوششیں شروع ہونے کے بعد روزانہ نئے مریضوں کی تعداد بڑھنے کے باوجود ترکی اپنے کرونا وائرس کے 85 فیصد مریضوں کو صحت یابی دینے میں کامیاب ہوا ہے۔

یکم جون کو پابندیوں میں نرمی یا ان کے مکمل خاتمے کے بعد سے ترکی میں روزانہ نئےکروناوائرس مریضوں کی تعداد بڑھ رہی ہے جو تقریباً دو ہفتوں میں دوگنی ہو رہی ہے۔

وزیر اور ترکی کے کروناوائرس سائنس بورڈ دونوں نے خبردار کیا ہے کہ نئے کیس سامنے آنے سے صرفِ نظر نہیں کیا جائے گا اور مستقل اضافہ اس وباء کے خلاف جنگ میں ایک زبردست دھچکا ثابت ہو سکتا ہے۔

تبصرے
Loading...