انقرہ میں ترکی کی معروف شخصیات کو پاکستان کے اعلیٰ قومی اعزازات دینے کی تقریب

0 1,727

ترکی کے لیے پاکستان کے سفیر جناب محمد سائرس سجاد قاضی نے آج انقرہ میں ہونے والی ایک باوقار تقریب میں ترکی کی دو معروف شخصیات کو پاکستان کے اعلیٰ ترین قومی اعزازات سے نوازا۔

صدرِ پاکستان نے معروف سیاست دان اور ترکی کی قومی اسمبلی کے سابق اسپیکر اسماعیل قہرمان کو "ہلالِ پاکستان” سے نوازا تھا۔ صدر نے سابق نائب وزیر اعظم اور سابق وزیر صحت ڈاکٹر رجب آق داغ کو "ہلالِ امتیاز” دینے کا اعلان کیا تھا۔ ان ترک شخصیات کو یہ دونوں اعزازات پاک-ترکی تعلقات کے فروغ اور استحکام کے لیے خدمات انجام دینے پر دیے گئے۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سفیر سائرس قاضی نے پاک-ترک تعلقات کو مضبوط کرنے کے لیے جناب اسماعیل قہرمان اور جناب رجب آق داغ کی خدمات کو سراہا۔ اس امر پر زور دیتے ہوئے کہ پاک-ترکی تعلقات کی جڑیں ہمارے آبا و اجداد کی زبردست کوششوں میں پیوست ہیں، سفیر سائرس قاضی نے کہا کہ اب ان تعلقات کو مزید مضبوط کرنے کی ذمہ داری ہمارے کاندھوں پر ہے کہ ہم اس اعتماد کو نئی نسل تک منتقل کریں۔

جناب اسماعیل قہرمان اور جناب رجب آق داغ نے اپنے تبصرے میں حکومتِ پاکستان کا ان اعزازات پر شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے پاک-ترک برادرانہ تعلقات کے فروغ کے لیے اپنی کوششوں کو جاری رکھنے کا اعادہ کیا۔

جناب اسماعیل قہرمان ترکی سیاست کی نمایاں شخصیات میں سے ایک ہیں۔ پاکستان اور اس کے عوام کے لیے ان کی غیر متزلزل دوستی اور محبت ان کے معروف کیریئر کی نمایاں علامت تھی۔ 1965ء کی پاک-بھارت جنگ کے دوران نوجوان طالب علم کی حیثیت سے انہوں نے جموں و کشمیر پر پاکستان کے اصولی مؤقف کی حمایت میں استنبول میں بڑی عوامی ریلیاں نکالیں۔ پاکستان کے ایک حقیقی دوست اور خیر خواہ کی حیثیت سے جناب قہرمان نے اپنے سیاسی کیریئر میں پاک-ترکی تعلقات کو مضبوط کرنے کے لیے ان گنت خدمات انجام دیں، جن میں تمام بین الاقوامی فورمز میں پاکستان کو مکمل حمایت دینا بھی شامل ہے۔

جناب رجب آق داغ ایک ممتاز پیشہ ورانہ اور سیاسی کیریئر رکھتے ہیں۔ انہوں نے خود کو پاکستان کا مخلص دوست ثابت کیا۔ وزیر صحت کی حیثیت سے انہوں نے پاکستان میں صحت کے نظام کو بہتر بنانے کے لیے زبردست خدمات انجام دیں۔ پاکستان کے سرکاری ہسپتالوں میں صحت کی جدید سہولیات کے حصول کی جانب باہمی تعاون کو بڑھانے کے اپنے ذاتی وژن اور شمولیت کے ذریعے انہوں نے پاکستان میں صحت کی اہم ضروریات کی فراہمی میں اہم کردار ادا کیا۔

ترک اراکین پارلیمان، مختلف وزارتوں/شعبوں، ذرائع ابلاغ اور پاکستانی برادری سے تعلق رکھنے والے اراکین نے تقریب میں شرکت کی۔

تبصرے
Loading...