اسرائیل دہشتگرد اور قابض ریاست ہے، ایردوان نے مسلم رہنماؤں کے سامنے نقشہ رکھ دیا

0 283

استنبول میں ہونے والے اسلامی تعاون تنظیم کے غیر معمولی اجلاس میں ترک صدر ایردوان  نے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسرائیل ایک دہشتگرد اور قابض ریاست ہے اور امریکی فیصلہ کا مقصد امن جدوجہد پر فلسطینوں کو سزا دینا ہے۔ فلسطینوں نے ہمیشہ فیصلہ کیا ہے کہ وہ تشدد کے بجائے امن کے خواہاں ہیں۔

صدر ایردوان نے مزید کہا کہ وہ یقین کے ساتھ کہتے ہیں کہ دنیا کے 196 ممالک کا امریکی فیصلے پر یکساں ردعمل ہے۔ اور میں کہتا ہوں کہ فلسطین میں امن صرف اسی صورت ممکن ہے اگر عالمی برادری سچائی کے ساتھ کھڑی ہو اور فلسطین کو جتنا جلد ممکن ہو آزاد ریاست تسلیم کر لے۔

انہوں نے تمام انصاف پسند ممالک سے کہا کہ وہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت بنائے جانے پر احتجاج کریں۔ اور تمام مسلمان ممالک فلسطین کی آزادی اور سالمیت کو کبھی بھی شکار نہیں بننے دیں گے۔

ایردوان نے کہا: "اب جب ایک قابض ریاست کو تسلیم کر لیا گیا ہے تو امن کے لیے کوئی دلیل باقی نہیں بچتی”۔ انہوں دوبارہ کہا کہ بیت المقدس اور مسجد الاقصیٰ مسلمان دنیا کے لیے سرخ لائن ہے۔

انہوں نے زور دیا کہ فلسطین کو بھی عالمی معاہدوں اور تنظیموں میں شامل کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ "قابض اور مقبوض کے درمیان غیر جانبدار رہنا، ظلم کی مدد کرنے کے برابر ہے”۔

انہوں نے 14 سالہ بچے کی تصویر دکھاتے ہوئے کہا کہ دہشتگردی اور کسے کہتے ہیں۔ ایک دس سالہ نہتہ بچہ جس کی آنکھوں پر پٹی باندھی گئی ہے اسے 20 اسرائیلی فوجی پکڑ کر لے جا رہے ہیں۔ دہشتگردی کیا ہوتی ہے۔ ہمیں اس کے بعد مزید کچھ بتانے کی ضرورت نہیں”۔

تبصرے
Loading...