اسرائیل نے مسجد الاقصیٰ سے دو ترک باشندوں کو گرفتار کر لیا

0 2,580

اسرائیلی سیکیورٹی فورسز نے جمعہ کے روز مسجد الاقصیٰ کے باب القاتانین سے دو ترک باشندوں کو گرفتار کر لیا ہے۔

گرفتاری اس وقت عمل میں آئی جب ترک شہریوں اور اسرائیلی فورسز کے درمیان ایک مختصر جھگڑا ہوا۔

موقع پر موجود افراد کے مطابق اسرائیلی اہلکاروں نے ترک شہریوں جن میں بچے بھی شامل تھے کو حرم شریف میں داخلے سے روکا۔ ترک پاشندوں میں چند نے ترک جھنڈے کا لباس اور عثمانی ٹوپیاں پہن رکھی تھیں۔

اسرائیلی سیکیورٹی فورسز ترک باشندہ پر شرط عائد کی کہ جب تک وہ جھنڈا اور عثامنی ٹوپی اتار نہیں دیتے تب تک وہ مسجد الاقصی میں داخل نہیں ہو سکتے۔ عینی شاہد کے مطابق اس بات پر جھگڑا ہوا۔

ترک خبر رساں ادارے انادولو ایجنسی کے مطابق ترک شہری بیلجیئم سے بیت المقدس آئے تھے اور ان کے پاس دوہری شہریت تھی۔

اسرائیل نے 1967ء میں عرب اسرائیل جنگ کے دوران بیت المقدس پر قبضہ کر لیا تھا جہاں مسجد الاقصی اور حرم الشریف واقع ہیں۔ اس عمل کو عالمی برادری نے تسلیم کرنے سے انکار کر دیا تھا۔ اسرائیل نے 1980ء شہر پر مکمل طور پر قبضہ کر لیا اور اسے صہیونی مرکز قرار دے دیا۔

تبصرے
Loading...