2016ء میں 50 روزہ طویل ‘دھیمے زلزلے’ نے استنبول کو ہلایا تھا، سائنسی تحقیق

0 1,039

ماحولیاتی تبدیلیوں پر تحقیقات کرنے والے ‘ارتھ اینڈ پلینٹیری سائنسز لیٹرز” کے نئی شائع شدہ تحقیق کے مطابق 2016ء میں 50 روزہ طویل ایک "دھیما زلزلہ” استنبول سے ٹکرایا تھا۔

س علاقے میں ایک بورےول سے "کشیدگی میٹر” کے اعداد و شمار کا استعمال کرتے ہوئے سائنسدانوں نے دریافت کیا، زلزلہ 2016 کے موسم گرما کے دوران استنبول کے چند کلومیٹر جنوب میں ہوا. اخبار نے کہا کہ زلزلہ 5.8 شدت کے زلزلے کے برابر ہو گا اگر اس نے اپنی توانائی کو ایک ہی بار پھر جاری کیا ہے.

مطالعہ کا کہنا تھا کہ لیکن اس دن میں آہستہ آہستہ اس کی توانائی کو جاری کرکے، زلزلہ ابھی تک ناکام نہیں ہوا. اگرچہ "سست زلزلے” کو غصہ نہیں آیا، لیڈ سائنسدان پیٹرکیا ماریناز-گارسن نے خبردار کیا کہ زلزلہ ہو سکتا ہے "غلطی کے دوسرے حصوں کو ناکامی کے قریب لایا.”

1999 میں، 17،000 سے زائد افراد ہلاک ہوئے اور 43،000 زخمی ہوگئے جب 7.4 شدت پسند زلزلہ نے مرمرہ کے علاقے 37 سیکنڈ تک پہنچائی. آفتاب کے مرکز میں استنبول کے مشرق وسطی کے بہت سے صنعتی ایٹمی صوبے کا ضلع گورکک تھا.

ترکی دنیا کے سب سے زلزلے سے متعلق سرگرم ممالک میں سے ہے، کیونکہ یہ ایک بہت سے غلطی کی غلط لائنوں پر واقع ہے، اور ترکی میں سب سے زیادہ ممکنہ طور پر تباہ کن غلطی لائن شمالی اناتولیا کی غلطی (این اے اے ایف) ہے، جہاں اناتولین اور یوروسین پلیٹیں ملیں. اینٹولین پلیٹ کے طور پر قائم ہڑتال پرچی کی غلطی شمالی تختے پر عرب پلیٹ کی طرف سے دھکیل دی جارہی ہے، این ایف اے نے اگست 17 میں زلزلے سمیت تباہ کن زلزلہ پیدا کیے ہیں.

تبصرے
Loading...