اطالوی جج نے مسلمان خاتون وکیل کو حجاب کی وجہ سے عدالت سے نکال دیا

0 1,409

اٹلی کے شہر بولگنا میں ایک مسلمان خاتون ٹرینی وکیل کو جج نے عدالت سے اس لیے نکال دیا کہ وہ حجاب پہن کر عدالت میں آئی تھی۔

25 سالہ مسلمان خاتون ٹرینی وکیل مقامی انتظامی عدالت میں حجاب پہن کر آئیں جس پر جج نے کہا کہ حجاب اتار دو یا عدالت سے باہر چلی جاؤ۔

مراکش میں پیدا ہونے والی اسمہ نے حجاب اتارنے کے بجائے عدالت سے کو چھوڑنے کا فیصلہ کیا۔

اسمہ نے حال ہی میں موڈینا یونیورسٹی سے لاء کی ڈگری مکمل کی ہے اور ریگیو ایمیلا نے یونیورسٹی کے لیگل آفس سے انہیں ٹرینی وکیل چنا ہے۔

اسمہ نے میڈیا کو بتاتے ہوئے کہا کہ انہیں اس سے قبل ایسے رویہ کا کبھی سامنا نہیں کرنا پڑا اور وہ اس سے قبل بھی کئی ہیرنگز حجاب کے ساتھ مختلف عدالتوں میں سن چکی ہیں

اطالوی ینگ وکلاء کی تنظیم نے واقعے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ آئینی اصولوں کے خلاف ہو۔ اور وہ مسلمان خاتون سے اظہار یکجہتی کرتے ہیں۔

تبصرے
Loading...