بیت المقدس مسلمانوں کے لیے سرخ لائن ہے، اسرائیل کا دارالحکومت بنایا گیا تو تعلقات کا خاتمہ کر دیں گے، ایردوان

0 947

ترک صدر رجب طیب ایردوان نے امریکا کو کئی معاملات پر تنقید کا نشانہ بنایا ہے جس میں بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت بنانا اور داعش کے کئی گروپوں کے ساتھ معاہدہ کیا جانا شامل ہے۔

انہوں نے امریکی بیان پر ردعمل دیتے ہوئے کہا: "بیت المقدس تمام مسلمانوں کے لیے سرخ لائن ہے۔ اس مسئلہ پر اسرائیل سے تمام سفارتی تعلقات کا خاتمہ کر دیں گے”۔

انہوں نے مزید کہا: "اگر امریکا نے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کیا تو ہم او آئی سی کے تحت تمام مسلمان حکمرانوں کو استنبول میں بلائیں گے”۔

انہوں نے شام میں داعش کے خلاف امریکی جنگ کے طریقہ کار پر بھی تنقید کی جو کرد پی کے کے کی شامی شاخ پی وائے ڈی کو مسلحہ کر کے لڑنے کی کوشش ہو رہی ہے۔

انہوں نے کہا: "داعش کے خلاف جنگ کے نام پر کوئی ترکی کو بے وقوف نہیں بنا سکتا۔ کیونکہ ترکی ناٹو کا حصہ ہونے کے ناطے داعش کے خلاف براہ راست صف آراء ہے”۔

تبصرے
Loading...