جہاد کی تعلیمات قرآن میں آئی ہیں، نصاب میں شامل کرنا فطری عمل ہے، ترک وزارت تعلیم

0 1,641

الپسلان درموش نے نئے نصاب پر پریس کانفرنس میں جہاد سے متعلق سوال پہ کہا کہ اس کی نصاب میں شمولیت فطری عمل ہے-

تعلیم کا مقصد ہی غلط بیان کردہ تصورات کی تصحیح ہے اور ہم جہاد کے ساتھ بھی یہی کریں گے۔
انہوں نے کہا کہ جہاد کا حکم قرآن پاک میں کئی جگہ آیا ہے اور ابتدائی طور پر اسے چھٹی سے نویں کلاس تک کے نصاب میں شامل کیا گیا ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ ساتویں صدی عیسوی کا مشہور ریاضی دان تھیلز آف ملیٹس ٹرگنومیٹری سے نابلد تھا مگر ہم آج بھی اپنے بچوں کو یہی پڑھنے پر مجبور کرتے ہیں۔ہم اسکو نہیں بدل سکتے کیونکہ ریاضی دان اسکے خلاف ہیں۔ کوئی یہ نہیں کہہ سکتا کہ یونیورسٹی سے انجینئرنگ کرنےوالوں کوٹرگنومیٹری بھی پڑھائی جائے۔
انہوں نے کہا کہ مزاحمت کے باوجود ٹرگنومیٹری کو 20 سے 60 فیصد تک آسان بنا دیا گیا ہے اور مزید آسانی کے لئے ہمیں ذہنیت بدلنا ہو گی۔
تبصرے
Loading...