انقرہ میں بغاوت کی منصوبہ بندی کرنے والے مرکزی ملزمان کا اسٹینڈنگ ٹرائل شروع

0 177

منگل کے روز اکنچی ائیربیس سے منسلک مرکزی ملزمان کا ٹرائل شروع ہو گیا ہے۔ ائیربیس کو بغاوت کے دوران بطور ہیڈ کوارٹر استعمال کیا گیا اور ترک افواج کے چیف خلوصی آکار کو یہیں مبحوس رکھا گیا تھا-

بغاوت ٹرائل
Photo: AA

پندرہ جولائی 2016ء کو ہونے والی ناکام بغاوت میں فتح اللہ گولن کی تنظیم سے تعلق رکھنے والے فوجی باغیوں نے 200 سے زاید ترک شہریوں کو شہید کردیا تھا جبکہ 2000 سے زائد شہری زخمی ہو گئے تھے۔

ترک خبر رساں ادارے ٹی آر ٹی ورلڈ کے مطابق بغاوت میں ملوث 486 مرکزی ملزمان کے خلاف ٹرائل کیا جا رہا ہے۔ ان پر ترک آئین کی خلاف ورزی، شہریوں اور صدر ترکی رجب طیب ایردوان کو قتل کرنے کے الزامات کا سامنا ہے۔

 

تبصرے
Loading...