نیتین یاہو نے سیز فائر کیوں کیا؟ ترکی اور پاکستان اسرائیل پر فضائی حملہ کرنے والے تھے

0 6,675

ایک کویتی اسکالر ڈاکتر عبد اللہ النفیسی نے انکشاف کیا ہے کہ سیز فائر سے متعلق خبریں لیک ہو رہی ہے کہ کیسے نیتن یاہو نے اچانک سے سیز فائر کے فیصلے کو قبول کر لیا تھا۔

انہوں نے اپنی ایک ٹویٹ میں لکھا ہے کہ ترکی اور پاکستان نے عراق اور اردن سے ان کے ائیر بیس مانگنے کی باقاعدہ درخواست دی تھی تاکہ وہ اپنی فضائی قوت کو فلسطینی مزاحمت کی حمایت میں استعمال کر سکیں۔ یہ بات امریکہ صدر جوبائیڈن نے اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کو ٹیلی فون پر بتائی اور سیز فائر کرنے کا کہا، جس پر فوری پر عملدرآمد شروع ہو گیا۔

ڈاکٹر عبد اللہ النفیسی سے جب اس بات پر ایک فالور نے اخباری ریفرنس مانگا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ اس اچانک سیز فائر پر بات کی جا رہی ہے اور یہ اس کی وضاحت ہے۔

ترک صدر رجب طیب ایردوان نے سیز فائر سے دو دن قبل کہا تھا کہ "ہم نے جس طرح کاراباغ اور اس سے ملحقہ غصب شدہ علاقہ کو چھڑوانے کے لیے آزربائیجان کی مدد کی، بالکل اسی طرح القدس اور فلسطینی سرزمین پر ہونے والے ظلم کے مقابلے میں اسی طرح کی حساسیت کے ساتھ متحرک ہیں”۔

ترک صدر رجب طیب ایردوان نے وزیراعظم پاکستان عمران خان سے ٹیلیفونک رابطہ بھی کیا تھا، دونوں رہنماؤں نے اسرائیلی بربریت اور جارحیت پر تبادلۂ خیال کیا اور شدید مذمت کی تھی۔

تبصرے
Loading...