قدرت کے حسین شاہکار: ترکی کی خوبصورت ترین جھیلیں

0 106

سپانجا جھیل

خلیج ازمت اور اداپازاری کے سبزہ زار کے درمیان واقع یہ جھیل خاندان بھر کی تعطیلات کے لیے ایک بہترین مقام ہے، جہاں پکنک کی جا سکتی ہے یا گرمیاں گزاری جا سکتی ہیں۔


اوزُن غول جھیل

پہاڑوں میں گھری اور سبز گھنے جنگلات کے ساتھ موجود اوزُن غول جھیل بحیرۂ اسود کے ساتھ واقع صوبہ طرابزون کا نگینہ ہے۔ یہ خلیجی ممالک سے تعلق رکھنے والے سیاحوں میں سب سے زیادہ مقبول ہے۔


نمرود جھیل

کوہِ نمرود ایک متاثر کن جگہ ہے، اپنی بلندی کی وجہ سے ہی نہیں بلکہ اپنے انوکھے شکلی جغرافیہ کی وجہ سے۔ یہ آتش فشاں جسے اب بھی متحرک سمجھا جاتا ہے بہت خوبصورت مناظر رکھتا ہے کہ جس کا مرکز ایک آتش فشانی دہانہ ہے۔ بطلس میں واقع نمرود جھیل ایک اہم سیاحتی مقام ہے جہاں ہزاروں مقامی اور بین الاقوامی سیاح آتے ہیں۔


ایبر جھیل

ایبر جھیل مغربی ترکی کے صوبہ افیون میں واقع ایک میٹھے پانی کی جھیل ہے۔ جھیل کے اندر کشتی رانی اور جنگلی حیات کا مشاہدہ آپ کو زندگی کا ایک بہترین تجربہ دے گا۔


آئمر جھیل

یہ صوبہ انقرہ میں واقع ایک چھوٹی جھیل ہے۔ اہلِ خانہ یا دوستوں کے ساتھ خوشگوار موسم میں یہاں جائیں، کرائے پر لی گئی سائیکل کے ذریعے یا جھیل کے گرد پیدل ہی چکر لگائیں۔


چلدیر جھیل

چلدیر جھیل اناطولیہ کی دوسری سب سے بڑی جھیل ہے جو 1,23,000 مربع میٹرز پر پھیلی ہوئی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ جیسے ہی یہ جھیل سردیوں میں جمتی ہے، سیاحتی سرگرمیاں شروع ہو جاتی ہیں۔


وان جھیل

ترکی کے مشرقی صوبہ وان اور بطلس میں واقع یہ ملک کی سب سے بڑی جھیل ہے۔ یہ ایک نمکین جھیل ہے جس کو اردگرد کے پہاڑوں سے آنے والے مختلف نالوں سے پانی ملتا ہے۔


جھیل کووادا

یہ ترکی کے صوبہ اسپارٹا میں واقع ہے اور اپنے غیر معمولی قدرتی حسن کے علاوہ کئی پودوں اور جنگلی حیات کی وجہ سے سیاحوں میں بہت مقبول ہے۔


بے شہر جھیل

بے شہر جھیل جنوب مغربی ترکی میں صوبہ اسپارٹا اور قونیہ میں واقع میٹھے پانی کی ایک بڑی جھیل ہے۔ اس جھیل پر غروبِ آفتاب کے مناظر بہت مشہور ہیں۔


موگان جھیل

موگان جھیل صوبہ انقرہ کی ایک چھوٹی سی جھیل ہے۔ یہ انقرہ کے شہریوں کے لیے پکنک کے عام مقامات میں سے ایک ہے۔ اس کے ساحل کے ساتھ کئی ریستوران موجود ہیں اور ساتھ ہی کیمپنگ اور مچھلیاں پکڑنے کی سرگرمیاں بھی یہاں خوب ہوتی ہیں۔


ازنیق جھیل

ازنیق جھیل ترکی کے شمال مغربی صوبہ برصہ میں واقع ایک جھیل ہے۔ اس جھیل کو 1989ء میں برڈ لائف انٹرنیشنل نے پرندوں کے لیے اہم علاقہ قرار دیا تھا کہ جنہیں بڑھتی ہوئی آلودگی اور ازنیق کی ایک تفریحی مرکز کی حیثیت سے ترقی سے خطرہ لاحق ہے۔


ابانت جھیل

ابانت جھیل جانے کا کوئی خاص وقت نہیں ہے، قدرت کا یہ شہر سال کے ہر حصے میں خوبصورت لگتا ہے۔ میٹھے پانی کی اس جھیل کے گرد گھنے جنگلات ہیں۔ یہ ترکی کے شمال مغربی صوبہ بولو کے ایک نیشنل پارک میں واقع ہے۔ استانبول سے تقریباً ساڑھے تین گھنٹے کی ڈرائیو پر موجود یہ جھیل مٹی کا تودہ گرنے سے وجود میں آئی تھی۔


ایغردر جھیل

ایغردر جھیل، جسے وقتاً فوقتاً بدلتے ہوئے رنگوں کی وجہ سے ست رنگی جھیل بھی کہتے ہیں، ترکی کے جھیلوں کے علاقے میں واقع ہے۔ 482 مربع کلومیٹرز کے علاقے کے ساتھ یہ ترکی کی چوتھی اور میٹھے پانی کی دوسری سب سے بڑی جھیل ہے۔


بافا جھیل

بافا جھیل قدرت، تاریخ، تفریح اور خوبصورت مناظر کا ایک خاص ملاپ ہے جو ترکی کے اہم سیاحتی علاقوں بودرُم اور ازمیر کے درمیان واقع ہے۔


سالدا جھیل

ترکی کی سب سے گہری جھیل، جس کا تقابل سفید ساحلی ریت اور نیلے پانی کی وجہ سے مالدیپ سے کیا جاتا ہے۔ یہ جنوبی ترکی کے بودور صوبے کے ضلع یشلووا میں واقع ہے۔ یہ پروفیشنل فری ڈائیونگ کے لیے مقبول ترین جگہ ہے۔


توز جھیل

توز جھیل دنیا کی انتہائی نمکین جھیلوں میں سب سے بڑی ہے اور ساتھ ہی ترکی کی دوسری سب سے بڑی جھیل ہے، جو کئی پرندوں کے لیے بہترین مسکن ہے۔ توز جھیل ترکی کی سب سے کم گہری جھیلوں میں سے ایک ہے، جس کی بیشتر حصوں میں گہرائی تقریباً نصف میٹر ہے۔ حالانکہ گرمیوں میں اس کا پانی کم ہو جاتا ہے لیکن بہار کے موسوم میں یہ 1,64,200 مربع میٹر پر پھیل جاتی ہے۔ حالانکہ ترکی کی نمک کی 70 فیصد ضروریات اس جھیل سے پوری ہوتی ہیں، لیکن یہ خشک ترین جھیلوں میں سے ایک ہے کیونکہ یہ جس علاقے میں واقع ہے وہاں بہت کم بارش ہوتی ہے۔

تبصرے
Loading...