ہم کسی بے پروائی یا غداری کو قطع برداشت نہیں کریں گے، صدر ایردوان

0 168

برداشت

آق پارٹی ریزا کی صوبائی ایڈوائزری کمیٹی سے خطاب کرتے ہوئے صدر ترکی اور چیئرمین آق پارٹی رجب طیب ایردوان نے کہا : "ایک طرف ہم پی کے کے، فیتو، داعش جیسی دہشتگرد تنظیموں کا اپنی دھرتی پر سانس لینا بند کر دیں گے تو دوسری طرف ہم شام اور عراق میں کھیلے جانے والے کھیل کو لپیٹ دیں گے۔ آپ سب پہلے ہی ہمارے جاری آپریشنز کے بارے جانتے ہیں، سب سے پہلا قدم ہم نے شام میں آپریشن فرات ڈھال سے شروع کیا اور نیو آرڈر کو پلٹ کر رکھ دیا جو خطے پر تھوپا جا رہا تھا”۔

ہم کسی بے پروائی یا غداری کو قطع برداشت نہیں کریں گے

انہوں نے زور دیتے ہوئے کہا: "اس وقت جمود، بے پروائی اور غداری کو قطعاََ برداشت نہیں کیا جائے گا جب ترکی اپنی آزادی کی نئی جنگ لڑ رہا ہے”ـ صدر ایردوان نے کہا: "ہم نے دیکھا کہ جو بنیاد عبادت بتاتے تھے، درحقیقت تجارت کرتے تھے اور غداری پر یقین رکھتے تھےـ کیا ہم نے دیکھا نہیں؟- اب وہ کہاں ہے؟ وہ پینسیلوانیا میں بیٹھا ہےـ ان کے بارے کیا کہا جائے جو اس کے پیروکار ہیں- وہ بھاگتے پھر رہے ہیں- ان میں کچھ جیل میں ہیں اور کچھ غیر ملک بھاگ چکے ہیں- یہ فتح اللہ گولن دہشگرد تنظیم (فیتو) ہےـ جب کہ دوسری پی کے کے تنظیم ہےـ ہم ان کے خلاف بھی لڑ رہے ہیں- ہماری ذمہ داری آسان نہیں ہےـ اس لیے ہمیں اپنی افواج کی پوری ملت کے ساتھ مدد کرنا ہےـ ہم سب سے بڑی طاقت اپنے اللہ سے حاصل کریں گے اور اس کے بعد اپنی ملت سےـ یہ وہ طریقہ ہے جس سے ہم آگے بڑھ رہے ہیں”ـ

دھمکیاں اس قوم پر کارگر نہیں ہوتیں جو 15جولائی کی شب موت سے خوفزدہ نہ ہوئی ہو

 

ہمیں اپنی تنظیم میں ایک جامع تبدیلی لانے کا آغاز کرنا ہوگا

انہوں نے 2019ء انتخابات بارے بات کرتے ہوئے سخت محنت پر زور دیا اور کہا: "میں نے کئی بار کہا ہے کہ میں نے اپنی پارٹی کئی شاخوں میں تھکن دیکھی ہے۔ ہم اپنی گرینڈ کانگریس کے عمل کا فائدہ اٹھائیں گے اور اپنی تنظیم میں جامع تبدیلی لانا چاہتے ہیں۔ بحیثیت چیئرمین میں اس معاملے پر یکسو ہوں۔ ہم نے اپنے ساتھیوں کے ساتھ سفر جاری رکھنا ہے جن میں وہ صلاحیتیں اور تحرک رکھتے ہوں جس سے قوم کی امیدوں پر پورا اترا جا سکے”۔

تبصرے
Loading...