ترکی میں کروناوائرس کے مریضوں کی تعداد 47 ہو گئی

0 252

ترکی میں کروناوائرس کے مریضوں کی تعداد بڑھتے ہوئے 47 تک پہنچ گئی ہے۔ وزیر صحت فخر الدین خوجہ نے اعلان کیا ہے کہ 29 نئے کیس سامنے آئے ہیں جن کے ساتھ وائرس کے شکار افراد کی تعداد 47 ہو گئی ہے۔

تمام نئے 29 مریضوں کا بلاواسطہ یا بالواسطہ امریکا، مشرق وسطیٰ یا یورپ سے تعلق ہے، جن میں سے تین سعودی عرب سے عمرہ کرکے وطن واپس آئے ہیں۔

وزیر صحت کا کہنا ہے کہ بیرونِ ملک سے رابطہ بدستور خطرہ رہے گا اور عوام سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ غیر ضروری سماجی رابطوں سے گریز کریں اور اگر بیرونِ ملک سے آئے ہیں تو خودکو سب سے الگ تھلگ رکھیں۔

وزیر نے پہلے بتایا تھا کہ اب تک ترکی میں وائرس سے کوئی موت واقع نہیں ہوئی ہے لیکن یہ بھی کہا کہ چند مریضوں کو سانس لینے میں تکلیف کا سامنا ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ ترکی منگل سے مزید 9 ممالک کی پروازیں بند کر دے گا، جس سے ان ممالک کی کل تعداد 20 تک پہنچ جائے گی۔

کروناوائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے وزارت داخلہ نے تقریباً تمام عوامی مقامات بند کرنے کا حکم دیا ہے جن میں چائے خانے، سینما، جم اور شادی ہالز وغیرہ شامل ہیں۔ وزارت اس سے پہلے تمام شراب خانے، ڈسکو اور نائٹ کلب وغیرہ بند کر چکی ہے۔

ملک کی سب سے بڑی مذہبی اتھارٹی صدارتِ مذہبی امور (دیانت) نے نمازِ جمعہ سمیت دیگر اجتماعات بند کر دیے ہیں جبکہ روزمرہ نمازوں کی ادائیگی کے لیے مساجد کو کھلا رکھا ہے۔

حکومت پہلے ہی 16 مارچ سے اسکولوں کو دو ہفتے کے لیے بند کر چکی ہے جبکہ جامعات کو تین ہفتوں کے لیے بند کیا گیا ہے۔

تبصرے
Loading...